پرویز مشرف سے متعلق سوال پر وزیر قانون پریس کانفرنس ادھوری چھوڑ کر چلے گئے

کراچی (پبلک نیوز) وفاقی وزیر قانون بیرسٹر فروغ نسیم نے کہا ہے کہ احتساب کے قانون میں تبدیلی کر کے نیب کو مزید بااختیار بنانے کی ضرورت ہے۔ نوے دن کے اندر سول کیسز کا فیصلہ آنا چاہیے۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ سول ریفارمز سے متعلق ٹاسک فورس کا اہم اجلاس ہوا۔ اجلاس میں سول کیسز کو جلد نمٹانے سے متعلق تجاویز تیار کی گئی ہیں۔ سول کیسز جلد نمٹانے کے لیے تین تجاویز تیار کی گئی ہیں۔ پہلے مرحلے میں کیس، اسٹی آرڈر اور بعد میں شواہد ریکارڈ کیے جائیں۔ اس طرح ایک سال میں پورا ٹرائل مکمل ہو سکتا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں بیریسٹر فروغ نسیم نے کہا کہ میرا اور چیف جسٹس کا کوئی تضاد نہیں۔ ہم سول لاز میں تجاویز بار کونسلز سے بھی شیئر کریں گے۔

وفاقی وزیر قانون نے پرویز مشرف کیس سے متعلق جواب دینے سے گریز کرتے ہوئے کہا کہ پرویز مشرف سے متعلق مجھ سے سوال نہ کریں۔ وزیر قانون پرویز مشرف سے متعلق سوال پر اٹھ کر چلے گئے۔

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں