قیادت کی کرپشن چھپانے کے بجائے اپوزیشن اسمبلی کیلئے کردار ادا کرے: وزیر قانون پنجاب

لاہور (پبلک نیوز) وزیر قانون پنجاب راجہ بشارت نے کہا ہے کہ اپوزیشن کی بوکھلاہٹ کا شکار ہے سیڑھیوں پر گو نواز گو کے نعرے لگائے گئے۔ شور شرابے سے اپوزیشن نے کچھ حاصل نہیں کیا۔ پی ٹی آئی اور اتحادی جماعتوں نے وزیر اعلی پر اعتماد کا اظہار کیا جس کے بعد کوئی بات باقی نہیں رہ جاتی۔

 

پنجاب اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر قانون پنجاب راجہ بشارت کا کہنا تھا کہ لوکل گورنمنٹ کا بل اپوزیشن کا شور قبل از وقت تھا۔ اپوزیشن کو بل پر بات کرنے کا موقع فراہم کیا جائے گا، ترامیم دینے کا موقع فراہم کیا جائے گا۔ بل کو آئین و قانون کے ضابطے کے مطابق لائیں گے۔ شور شرابے سے اپوزیشن نے کچھ حاصل نہیں کیا۔ اسمبلی سے اسے پاس کروایا جائے گا۔ حکومت کی کوشش ہے کہ اس اسمبلی کے اختیارات میں اضافہ کریں اسٹینڈنگ کمیٹی کو مضبوط کیا ہے۔

 

اپوزیشن کی بوکھلاہٹ کا شکار ہے سیڑھیوں پر گو نواز گو کے نعرے لگائے گئے۔ قیادت کی کرپشن چھپانے کے بجائے اپوزیشن اسمبلی کے لیے کردار ادا کریں۔ سٹینڈنگ کمیٹی کا انیس اور اکیس پر اتفاق ہوا باقی معاملات حل کئے جا سکتے ہیں۔ پی ٹی آئی اور اتحادی جماعتوں نے وزیر اعلی پر اعتماد کا اظہار کیا جس کے بعد کوئی بات باقی نہیں رہ جاتی۔ علیم خان ضمانت کا معاملہ عدالت میں ہے اس سے حکومت کا کوئی تعلق نہیں۔

 

اسمبلی قانون سازی کرتی ہے پورا حق رکھتے ہیں قانون سازی کا وہی حق استعمال کر رہے ہیں کوئی بھی ادارہ حکومت کو ڈکٹیٹ نہیں کر سکتی حکومت کا کام قانون سازی کرنا ہے۔ نئے بل میں تحصیل یا ڈسٹرکٹ چئیرمین کو ہٹانے کا طریقہ کار ٹو تھرڈ میجورٹی کے تحت ہی ہوگا تاہم منتخب نمائندہ کے خلاف پہلے اور آخری سال تحریک عدم اعتماد نہیں لائی جا سکتی۔ ارکان اسمبلی کی تنخواہوں میں اضافے کا بل اتفاق رائے کے بعد پیش کیا جائے گا۔

حارث افضل  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں