لاہور ہائیکورٹ: شہباز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم

لاہور (ادریس شیخ) لاہور ہائیکورٹ نے شہباز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دے دیا۔ لاہور ہائی کورٹ کے 2 رکنی بنچ نے شہباز شریف کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کرنے سے متعلق کیس کا فیصلہ سنا دیا۔

 

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس ملک شہزاد اور جسٹس مرزا وقاص رؤف پر مشتمل بنچ نے شہباز شریف کی درخواست پر سماعت کی۔ شہباز شریف کے وکلاء نے مؤقف اختیار کیا کہ نیب نے جب شہباز شریف کو بلایا شہباز شریف پیش ہوئے پھر بھی نام ای سی ایل میں شامل کر دیا گیا۔ ایان علی کے کیس میں بھی عدالت نے ایان علی کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دیا۔ شہباز شریف کی درخواست ضمانت منظور ہونے کے بعد غیر قانونی طور پر شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں شامل کیا گیا۔ عدالت سے استدعا کی گئی کہ شہباز شریف کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ سے نکالنے کا حکم دیا جائے۔

نیب پراسیکیوٹر نے دلائل دیئے کہ 23 اکتوبر کو آمدن سے زائد اثاثوں کی انکوائری شروع کی۔ شہباز شریف کے اکاؤنٹس سے مشکوک ٹرانزیکشنز ہوئی ہیں۔ نیب پراسیکیوٹر نے شہباز شریف کی درخواست مسترد کرنے کی استدعا کی۔

 

عدالت نے شہباز شریف اور نیب پراسیکیوٹر کے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ سناتے ہوئے شہباز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دے دیا۔

حارث افضل  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں