ملائیشیاء نے جے ایف 17 تھنڈر طیارے کی خریداری میں دلچسپی ظاہر کر دی

اسلام آباد (رمیشہ قریشی) پاکستان کی شان جے ایف 17 تھنڈر نے بھارت کے ساتھ فضائی جھڑپ میں اپنی صلاحیت کا لوہا منوایا، بھارتی طیارے مگ 21 کو گرا کر ٹیسٹڈ ان وار کا درجہ بھی حاصل کیا۔ جے ایف سیونٹین تھنڈر طیاروں کا بلاک ٹو جدید ترین ٹیکنالوجی سے لیس ہے۔

 

بارہ سال پہلے پاک فضائیہ میں شامل ہونے والے جے ایف سوینٹین تھنڈر لڑاکا طیاروں سے متعلق کسی کو معلوم نہ تھا کہ یہ پلک جھپکنے میں بھارت کا غرور کشمیر کی پہاڑیوں پر خاک میں ملا دیں گے۔ پاکستان ایروناٹیکل کمپلیکس کامرہ میں تیارہ کیا جانے والا یہ طیارہ اس وقت ملکی دفاع میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت اختیار کر چکا ہے۔ چین کے اشتراک سے تیار ہونے والا جدید ترین لڑاکا طیارہ 23 مارچ ائیر شو میں فلائی پاسٹ کا حصہ بھی ہے، ملائیشیا نے بھی اس طیارے کی خریداری میں دلچسپی ظاہر کر دی۔

 

جے ایف 17 تھنڈر طیارے کی 58 فیصد پراڈکشن کے حقوق مکمل طور پر پاکستان ایراناٹیکل کمپلیکس کامرہ کے پاس ہیں۔ جے ایف سیونٹین تھنڈر طیاروں کا بلاک ٹو جدید ترین ٹیکنالوجی سے لیس ہے، جبکہ بلاک تھری کی تیاری آخری مراحل میں ہے۔ پاک فضائیہ کا ملٹی رول لڑاکا طیارہ اب جدید ترین میزائل کی تنصیب کے بعد دن اور رات میں اہداف کو طویل فاصلے تک درست نشانہ بنانے کی صلاحیت سے بھی لیس ہو گیا ہے۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں