سی فوڈ ریستوران میں صارف کے کھانے سے اصل موتی نکل آیا

مین ہٹن (پبلک نیوز) امریکی کے ریستوران میں سی فوڈ کھاتے ہوئے ایک شخص کو منہ میں پتھر محسوس ہوا اس نے اگل کر دیکھا تو معلوم ہوا کہ وہ ایک اصل موتی تھا جس کی قیمت ہزاروں ڈالر میں ہے۔

 

رِک اینٹوش نامی شخص سی فوڈ کھانے کے لیے ریستوران میں ظہرانے کے لیے گیا اور کھانے کا آرڈر دیا جسے کھاتے ہوئے اس کے منہ میں اصل موتی آگیا۔

پہلے اس کو لگا کہ یہ ایک پلاسٹک کا ٹکڑا ہے جو اس کے کھانے میں موجود ہے یا پھر یہ اس کے دانتون کی فلنگ ہے لیکن اسے ہاتھ میں رکھ کر دیکھا تو وہ مٹر کے دانے کے برابر ایک موتی تھا اور اس پر ایک سیاہ دھبہ بھی موجود تھا۔ ریستوران کے شیف نے تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ یہ سچا موتی ہے اور سیاہ نقطے کی وجہ سے مزید نایاب ہوگیا ہے۔

ریستوران کے شیف کا کہنا تھا کہ میں 28 سال سے کام کر رہا ہوں میرے ساتھ  دو مرتبہ ایسا واقعہ ہوا ہے کہ کھانے کے دوران کوئی موتی برآمد ہوا ہو جواب کھانا آرڈر کرنے والے صارف کی ملکیت ہے۔

حارث افضل  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں