دنیا بھر میں خسرے کی وبا آؤٹ آف کنٹرول

لاہور (پبلک نیوز) دنیا بھر میں خسرے کی وبا نے سر اٹھا لیا۔ عالمی ادارہ صحت کی وارننگ کے مطابق، دنیا بھر میں 2019 کے پہلے تین ماہ میں خسرے کے مریضوں کی تعداد میں 3 گنا اضافہ ہو چکا ہے۔

 

عالمی ادارہ صحت کےاعداد و شمار سے صاف ظاہر ہے کہ دنیا کو خسرے کی وبا کا سامنا ہے۔ افریقہ کے کئی خطوں میں خسرے کے مریضوں میں 700 گنا تک اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ یوکرین، مڈغاسکر اور بھارت سب سے زیادہ متاثر ہوئے ہیں۔ ستمبر 2018 سے اب تک مڈغاسکر میں خسرے سے 800 اموات ہوئیں۔ ڈبلیو ایچ او کا کہنا ہے کہ پاکستان، یمن اور برازیل میں کمسن بچے سب سے زیادہ متاثر ہو رہے ہیں۔ جبکہ قومی ادراہ صحت کے مطابق خسرہ کے حوالے سے زیادہ خطرات موجود نہیں ہیں اور ڈاکٹرز کے مطابق خسرہ ایسا وئراس جو ایک سے دوسرے بچے کو باآسانی لگ سکتا ہے۔ اس سے بچاو  تبھی ممکن ہے جب ٹائم پر والدین بچوں کو ویکسنشن کریں۔

 

ڈآکٹرز کے مطابق خسرہ کے وائرس انسانی جسم پر سرخ دانوں کی صورت میں نمودار ہوتا ہے جو نمونیہ کہ شکل اختیار کر لیتا ہے۔ ڈبلیو ایچ او کی جانب سے ویکسن اسپتالوں میں موجود ہے۔ دنیا بھر میں خسرہ کی پھلنے کی بڑی وجہ غربت اور آگاہی نہ ہونا ہے۔

حارث افضل  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں