کراچی: میڈیکل رپورٹ میں 15 سالہ بچی سے مبینہ زیادتی کی تصدیق

کراچی (پبلک نیوز) شہر قائد میں 15 سالہ بچی سے مبینہ زیادتی کی تصدیق ہو گئی۔ میڈیکل رپورٹ سے ثابت ہو گیا کہ بچی کو مبینہ زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔ میڈیکل رپورٹ میں زیادتی ثابت ہونے پر وفاقی وزیر فیصل واوڈا نے سندھ حکومت پر کڑی تنقید کی۔

اپنے آفیشل ٹوئٹر اکاؤنٹ سے ٹویٹ کرتے ہوئے انھوں نے واقعہ کی بروقت تحقیقات نہ ہونے پر سندھ حکومت پر سخت تنقید کی۔ ان کا کہنا تھا کہ ماں کا کردار بچی کو زیادتی کا نشانہ بنانے کی وجہ کیسے بن سکتا ہے؟ ہمارے معاشرہ میں قاتل مرد آزادانہ گھوم پھر سکتا ہے۔ مگر عورت کا کردار بچی کی عصمت دری کا جواز بنا دیا جاتا ہے۔

انھوں نے مزید کہا کہ زیادتی ثابت ہونے کے بعد تحقیقات نہ کرنے کا کوئی جواز باقی نہیں۔ ماں اپنے کیے کی سزا خود بھگتے، بچی قیمت کیوں ادا کرے؟ سندھ حکومت کارروائی کے بجائے مخلتف لوگوں کی رائے کا انتظار کرتی رہی۔

فیصل واوڈا نے سندھ حکومت پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ یہ کیسی حکومت ہے؟ وہ تجزیہ کار اور سوشل ایکٹوسٹ کہاں ہیں جو صرف لوگوں کے پہناوؤں پر ہی بات کرتے ہیں۔ معاشرہ کے اصل مسائل کی بجائے صرف یہ دیکھتے ہیں کہ کون کس گاڑی پر جا رہا ہے۔ نفرت کرنے والے صرف نفرت ہی پھیلا سکتے ہیں، ایسے لوگ بری طرح بے نقاب ہو چکے ہیں۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں