ادویات کی قیمتوں میں اچانک ہوشربا اضافہ، عوام بلبلا اٹھے

اسلام آباد (پبلک نیوز) ادویات کی قیمتیوں کی اصل کہانی، وفاقی درالحکومت میں ادویات کی  قیمتیں اچانک کیسے بڑھی۔ بڑھائی گئی قیمتیں ڈریپ کی طے کردہ ہی ہیں ڈریپ نے قیمتوں کے معاملے کو الجھا کر رکھ دیا۔

 

وفاقی دارالحکومت میں ادویات کی قیمتیں بڑھنے کے معاملے میں عوام میں ایک بار پھر تشویش پیدا کر دی۔ بڑھائی گئی قیمتیں ڈریپ کی طے کردہ قیمتیوں کے برابر ہی ہیں۔ ذرائع کے مطابق نوٹیفیکشن کو جان بوجھ کر ٹیکنیکل رکھا گیا تاکہ عوام کی سمجھ  سے بالاتر رہے۔

 

ہاڈرشپ کیسز میں 10 روز میں 2 بار ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کے اثرات عوام پر پڑنے لگے۔ ڈریپ کی جانب سے 31 دسمبر 2018 کو ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کیا گیا اور پھر 10 جنوری کو دوبارہ 9 سے 15 فیصد اضافہ کیا گیا۔

 

فارما کمپنیوں کی جانب سے بڑھائی گئی حالیہ قیمتیں ڈریپ کی طے کردہ ہی ہیں۔ ارکیٹ میں کئی فارما کمپنز کا وہ سٹاک موجود تھا جو ڈریپ کی بڑھائی گئی قیمتوں سے پہلے کا تھا۔ نئے سٹاک کو مارکیٹ میں لانے پر فارماکمپنیوں نے ڈریپ کی طے کردہ قیمتوں پر ادویات کی فروخت شروع کر دی۔

 

وفاقی وزیر صحت عامر کیانی  نے گزشتہ روز ادویات کی قیمتوں میں غیرقانونی اضافے پر ڈریپ کو تحقیقات کی ہدایت جاری کی تھیں اور وزارت صحت کی جانب سے ادویات کی قیمتیں بڑھنے کے معاملے پر متعلقہ اداروں کو خط بھی لکھ دیا گیا۔

حارث افضل  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں