گزشتہ پنجاب حکومت کا میٹروبس معاہدہ موجودہ حکومت کیلئے درد سر بن گیا

لاہور(ادریس شیخ) میٹرو بس پر سالانہ اربوں روپے کی سبسڈی، پنجاب حکومت سبسڈی ختم کرنے یا جاری رکھنے سے متعلق حتمی فیصلہ نہ کر سکی۔ صوبائی وزراء نے سبسڈی ختم کرنے کا مطالبہ کیا، مخالفت پر تجویز واپس لے لی۔

 

محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب کی جانب سے مجموعی طور پر 14 ارب روپے سبسڈی کی مد میں مختص کیے گئے ہیں، جس میں سے بارہ ارب 91 کروڑ 91 لاکھ 44 ہزار روپے سبسڈی میٹرو بس لاہور، ملتان، راولپنڈی کیلئے رکھی گئی ہے۔ گزشتہ پنجاب حکومت کا میٹروبس کا معاہدہ موجودہ حکومت کیلئے درد سر بن گیا، متعدد صوبائی وزراء نے سبسڈی ختم کرنے کا مطالبہ کیا، مخالفت پر تجویز واپس لے لی۔

 

ذرائع کا کہناہے کہ سبسڈی ختم کرنے اور ٹکٹ مہنگا کرنے سے شہریوں کا موجودہ حکومت پر اعتماد کم ہو گا۔ پنجاب حکومت میٹرو بس کیلئے یومیہ 3 کروڑ 53 لاکھ 94 ہزار 945 روپے سبسڈی دینے پر مجبور ہے۔ پنجاب حکومت نے صوبائی کابینہ سے میٹرو بس کی اربوں روپے کی سبسڈی سے متعلق تجاویز طلب کی ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ میٹرو بس سبسڈی کی وجہ سے قومی خزانے پر بوجھ کم کرنے کیلئے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں اہم ترین فیصلے متوقع ہیں۔

عطاء سبحانی  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں