بابر ی مسجد کی جگہ رام مندر تعمیر ہو گا، مودی سرکار کا پارٹی منشور

پبلک نیوز: مودی سرکار کی انتہا پسندی کی روایتی پالیسی برقرار، بابری مسجد کی جگہ رام مندر کی تعمیر کو لوک سبھا انتخابات کے لیے پارٹی منشور میں شامل کر لیا۔ مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت سے متعلق آرٹیکل 370اور 35 کو ختم کرنے کی دھمکی بھی دے ڈالی۔

تفصیلات کے مطابق بھارت کی حکمراں جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی نے عام انتخابات کے لیے 75 نکات پر مشتمل اپنا منشور پیش کر دیا۔ بی جے پی نے اپنی روایتی انتہا پسندی کی پالیسی کو برقرار رکھا۔

منشور میں لکھا ہے کہ بابری مسجد کی جگہ رام مندر کی تعمیر اور مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت سے متعلق بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 اور 35 اے کو ختم کرنے کی کوشش کی جائے گی۔

بھارتی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے کسانوں کو بھی اپنے جھانسے میں لینے کی کوشش کرتے ہوئے کہا کہ کسان کریڈٹ کارڈ سے قرض پر پانچ سال تک کوئی بیاج نہیں ہو گا۔

راج ناتھ سنگھ کا مزید کہنا تھا کہ 130 کروڑ بھارتیوں کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے یہ منشور بنایا گیا ہے، جسے 2022 تک مکمل کیا جائے گا۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں