اسٹیٹ بینک کی نئی مانیٹری پالیسی، شرح سود میں ڈیڑھ فیصد اضافہ

کراچی (پبلک نیوز) اسٹيٹ بينک نے آئندہ 2 ماہ کے لیے مانيٹری پالیسی کا اعلان کردیا۔ ڈیڑھ فیصد اضافے سے شرح سود 10 فيصد مقرر کر دی گئی۔ اسٹیٹ بینک اعلامیہ کے مطابق مہنگائی کی شرح ميں مسلسل اضافے کو روکنا ہوگا۔

اسٹیٹ بینک پاکستان کی نئی مانیٹری پالیسی آ گئی۔ ڈیڑھ فیصد اضافے سے شرح سود 10 فيصد ہو گئی۔ شرح سود پانچ سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی۔ اسٹیٹ بینک اعلامیہ کے مطابق مہنگائی ميں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ جس کو روکنا ہوگا اور کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم ہو رہا ہے۔

اسٹيٹ بينک نے معيشت ميں استحکام کے لیے مزيد کوششوں پر زور دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ شرح سود میں اضافہ سے مقامی قرض پر سالانہ سود کی ادائیگی 240 ارب روپے بڑھ گئی۔ اسٹیٹ بینک کے مطابق معیشت کو مہنگائی اور بجٹ خسارہ جیسے چیلنجز کا سامنا ہے۔

حارث افضل  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں