ہزار گنجی سبزی منڈی کوئٹہ میں دھماکے کے بعد شہر میں سوگ کا سماں

کوئٹہ(پبلک نیوز) کوئٹہ دھماکے کے بعد شہر کی فضا سوگوار ہے، ہزارہ برادری کا مغربی بائی پاس پر دھرنا دوسرے روز میں داخل ہو گیا ہے، مظاہرین کا مطالبہ ہے کہ خودکش حملے میں ملوث عناصر کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔ احتجاج کے باعث مغربی بائی پاس پر ٹریفک کی آمد و رفت معطل ہو گئی۔

ہزار گنجی سبزی منڈی کوئٹہ میں دھماکے کے بعد شہر میں سوگ کا سماں ہے، ہر آنکھ آشکبار، ہر دل افسردہ ہے۔ افسوسناک واقعے پر ہزارہ برادری کی جانب سے مغربی بائی پاس پر دھرنا دوسرے روز بھی جاری ہے۔ مظاہرین کا کہنا ہے کہ حملوں کے باوجود سکیورٹی فراہم نہیں کی گئی، مطالبات منظور نہ ہونے تک دھرنا جاری رہے گا۔ مظاہرین کے دھرنے اور رکاوٹوں کے باعث مغربی بائی پاس پر ٹریفک کی آمد و رفت معطل ہو گئی ہے۔ خودکش حملے میں شہید 20 میں سے 8 افراد کو مقامی قبرستان میں سپرد خاک کر دیا گیا ہے۔

متعلقہ خبر: کوئٹہ: ہزارگنجی منڈی میں دھماکا،20افرادجاں بحق،48زخمی

گزشتہ روز کوئٹہ کے علاقے ہزار گنجی کی سبزی منڈی میں خودکش دھماکے کے نتیجے میں ایف سی اہلکار سمیت 20 افراد شہید اور 48 زخمی ہوئے جن میں زیادہ تر تعداد ہزارہ برادری کے افراد کی تھی۔ صوبائی حکومت نے دہشت گردوں کے سرپرستوں کیخلاف آپریشن میں تیزی لانے اور سبزی مارکیٹ میں سی سی ٹی وی کیمرے نصب کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں