فیصل آباد میں ایم کیو ایم رہنما، نصیر آباد میں بھائی کے ہاتھوں بہن قتل

پبلک نیوز: فیصل آباد میں تھانہ ستیانہ کے علاقہ میں ایم کیو ایم کے رہنما قتل، نصیر آباد میں  بھائی نے سیاہ کاری کے الزام میں بہن سمیت 2 افراد کو فائرنگ کر کے موت کی نیند سلا دیا، جامشورومیں  ٹرالر اور گاڑی  کے درمیان تصادم کے باعث تین افراد جاں بحق۔

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم کے فیصل آباد میں ایم کیو ایم رہنما کو گولی مار کر قتل کر دیا گیا۔ پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ رانا عادل کی پرانی دشمنی تھی، جبکہ ستیانہ پولیس نے لاش کو تحویل میں لے کر کارروائی شروع کر دی۔ رانا عادل ایم کیو ایم ستیانہ سٹی کے عہدے دار تھے۔

دوسری جانب نصیر آباد میں  بھائی نے سیاہ کاری کے الزام میں بہن سمیت 2 افراد کو فائرنگ کر کے قتل کر دیا، جبکہ ملزم فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا ہے۔ پولیس نے ابتدائی کارروائی کے بعد لاشیں ورثاء کے حوالے کر د یں۔ تاہم ابھی  تک کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی۔

ادھر جامشورو میں لونی کوٹ کے قریب ایم نائین موٹروے پر ٹرالر اور گاڑی  کے درمیان تصادم ہونے سے تین افراد جاں بحق جبکہ دو شدید زخمی ہو گئے۔ زخمیوں کو تشویشناک حالت میں جامشورو کے لیاقت میڈیکل اسپتال منتقل کر دیا گیا۔

جبکہ میانوالی کے قدیمی قبرستان میں قبضہ مافیاء نے چار دیواریاں بنا دیں۔ لوگوں کو ورثاء کی تدفین میں مشکلات کا سامنا ہے۔ چار دیواری کرنے سے  قبرستان میں جگہ تنگ ہوگئی۔ جس سے لوگوں کو کافی پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے لیکن ضلعی انتظامیہ کی جانب سے اس جانب کوئی توجہ نہیں دی جا رہی۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں