متحدہ عرب امارات کے شہری نے شادی کے صرف 15 منٹ بعد بیوی کو طلاق دے دی

دبئی (پبلک نیوز) غصہ حرام ہے، غصہ کی حالت میں لیے گئے فیصلہ ہمیشہ غلط ثابت ہوتے ہیں۔ متحدہ عرب امارات کے ایک شہری نے معمولی سی بات پر شادی کے 15 منٹ بعد ہی بیوی کو طلاق دیدی۔

تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات میں ایک دلھا اور دلھن کے والد کے درمیان جہیز کے لیے 1 ایک لاکھ کویتی ریال (تقریباً 30 ہزار ڈالر) دینے کا معاہدہ طے پایا تھا۔ جس کی آدھی رقم یعنی 50 ہزار کویتی ریال شادی سے پہلے یعنی جب بات طے ہوئی اس وقت دینے تھے اور بقایا رقم شادی کے فوراً بعد ادا کرنا تھی۔

معاہدہ کے مطابق دلھا نے 50 ہزار کویتی ریال اپنے سسر کے حوالے کیے جس کے بعد خوش اسلوبی سے تمام معاملات طے پائے۔ شادی کے بعد جب دلھا جانے لگا تو دلھن کے والد نے بقایا رقم کا مطالبہ کیا جس پر دلھا نے کہا کہ مجھے صرف 5 منٹ دیں، پیسے گاڑی میں رکھے ہیں جو میں لا کر دیتا ہوں تاہم دلھن کے والد نے یہ ماننے سے انکار کر دیا۔

دلھن کے والد نے کہا کہ وہ خود جانے کے بجائے اپنے کسی دوست یا رشتہ دار کو پیسے لینے کے لیے بھیجے اور وہ گاڑی سے پیسے لا کر دے۔ تاہم دلھا کو اپنے سسر کی یہ بات پسند نہ آئی، اسے اپنی توہین سمجھا اور اس نے غصہ میں آ کر دلہن کو طلاق دے دی۔

4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں