منور ظریف کو جہانِ فانی سے رخصت ہوئے 43 برس بیت گئے

لاہور (پبلک نیوز) اداس چہروں پر ہنسی بکھیرنے والے منور ظریف کو جہانِ فانی سے رخصت ہوئے 43 برس بیت گئے۔ تاہم اپنی جانداری اداکاری کے باعث مداحوں کے دلوں میں آج بھی زندہ ہیں۔ منورظریف نے 300 سے زیادہ فلموں میں کام کیا۔ ان کا نبھایا ہر کردار امر ہو گیا۔

 

منور ظریف نے اپنا ہر کردار نئے انداز سے پیش کیا۔ ان کی یادگار فلموں میں نوکر ووہٹی دا، بنارسی ٹھگ، بدلہ، دامن، چنگاری، منجھی کتھے ڈاواں، چکر باز، رنگیلا، طوفان، بدتمیز، شوقین میلے دی نے شہرت حاصل کی۔

 

منور ظریف 2 فروری 1940ء کو گوجرانوالہ میں پیدا ہوئے، ان سے پہلے بڑے بھائی ظریف فیملی دنیا میں راج کر رہے تھے۔ ظریف کی وفات کے بعد منور ظریف نے فلم انڈسٹری میں قدم رکھا۔ وہ ان کا مخصوص انداز مقبول ہو گیا۔ اداکار رنگیلا کے ساتھ ان کی جوڑی فلموں کی کامیابی کی ضمانت سمجھی جاتی تھی۔

 

ان کا خاندان مزاحیہ اداکاری کی دنیا میں سٹیج، فلم اور ٹی وی سکرین کے حوالے سے اپنی پہچان رکھتا تھا۔ بڑے بھائی ظریف مرحوم کے علاوہ منیر ظریف، رشید ظریف، مجید ظریف اور ظریف مرحوم کے صاحبزادے پپو ظریف نے شوبز انڈسٹری میں جوہر دکھائے۔ منور ظریف 29 اپریل 1976ء کو عارضہ قلب کے باعث دنیا سے رخصت ہو گئے۔

حارث افضل  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں