حادثاتی طور پر پارٹی چیئرمین بننے والا بلاول بھارت کا مقدمہ لڑ رہا ہے: مراد سعید

اسلام آباد (پبلک نیوز) قومی اسمبلی میں دوسرے دن بھی شور شرابہ رہا، اپوزیشن ارکان نے سپیکر ڈائس کا گھیراؤ کیا اور ایجنڈے کی کاپیاں پھاڑ کر احتجاج کیا۔

 

قومی اسمبلی میں پی ٹی آئی رہنما مراد سعید کی تقریر کے دوران اپوزیشن نے شدید نعرے باز کی۔ مراد سعید کا کہنا تھا نعرے لگانے والوں سے پوچھتا ہوں کوئی شرم ہوتی ہے کوئی خیا ہوتی ہے۔ پوزیشن میں ہمت ہی نہیں کہ مجھے سن سکے، اپوزیشن مجھے 2 منٹ خاموشی سے سنے، انہیں آئینہ دکھا دوں گا۔ سندھ میں ایک ایک اکاؤنٹ سے اربوں روپے نکل رہے ہیں۔ عمران خان امریکہ کی آنکھوں میں آنکھ ڈال کر بات کر رہا ہے۔ ماضی میں امریکہ ڈومور کا مطالبہ کرتا تھا۔ معصوم بچی غلط انجکشن لگنے سے بلک بلک کر مرگئی، معصوم بچی کی ہلاکت ان کے منہ پر طمانچہ ہے۔

مراد سعید  کا کہنا تھا کہ بلاول جو مرضی کرلیں آپ سے قوم کا پیسہ نکال کر قوم کے حوالے کیا جائے گا، جو مرضی کرلو احتساب رکا نہ رکے گا۔ مودی کو اپنے نواسے کی شادی پر گھر بلایا گیا۔ مجھے معلوم ہے یہ میری بات نہیں سنیں گے۔ حسین حقانی جو پاکستان کے خلاف زیر اگلتا تھا اس کو پیپلزپارٹی نے سفیر لگایا۔ بلاول بھٹو نے انڈیا کا مقدمہ لڑا۔ خرم دستگیر آپ کے لیڈر کو کلبھوشن کا نام لیتے ہوئے شرم آتی تھی۔ حادثاتی طور پر پارٹی چیئرمین بننے والا بلاول بھارت کا مقدمہ لڑ رہا ہے۔

حارث افضل  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں