مہنگائی کی تازہ لہر، روٹی عام عوام کی پہنچ سے دور

لاہور(کرار ہمایوں) مہنگائی نے عوام سے روٹی بھی دور کر دی ہے، آٹے اور میدے کی قیمتیں بڑھنے کے پیش نظر نان بائی ایسوسی ایشن نے روٹی اور نان کی قیمتوں میں اضافے کا عندیہ دے دیا ہے۔

 

روٹی بھی عام عوام کی پہنچ سے دور ہونے کیلئے تیارہو گئی ہے۔ فلورملز ایسوسی ایشن کی جانب سے 17 فیصد جنرل سیلز ٹیکس کے نفاذ کے بعد نان 20 روپے میں اور روٹی 15 روپے میں فروخت کرنے کا فیصلہ کر دیا گیا ہے۔ نان بائی ایسوسی ایشن نے نان کی قیمت 20 روپے تک بڑھانے کا مطالبہ کیا ہے جبکہ انتظامیہ نان کی قیمت دو روپے بڑھانے تک کیلئے تیار ہیں۔

شہریوں نے روٹی اور نان کی قیمت میں اضافہ مسترد کر دیا ہے اور کہتے ہیں کہ ریلیف ملنے کے بجائے مشکلات پہلے سے بھی بڑھ گئیں ہیں۔ حکومت غریب کے منہ سے روٹی کا نوالہ چھین رہی ہیں، مہنگائ نے غریب ومتوسط طبقہ کا جینا محال کر دیا ہے۔ عوام کا موقف ہے کہ انہیں کسی طرز کا ریلف نہیں مل پا رہا اور جسم و جان کا رشتہ قائم رکھنے میں شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

 

نان بائ ایسوسی ایشن کا موقف ہے کہ آٹے کی 80 کلو بوری پر 550 روپے تک کا اضافہ کر دیا ہے جبکہ 2 من آٹے کی بوری 2800 سے بڑھ کر 3350 روپے میں مل رہی ہے۔  فائن میدے کی بورے پر 700 روپے کے اضافے سے قیمت 3900 سے بڑھ کر 4600 روپے ہو گی ہے۔ فلور ملز ایسوسی ایشن کی جانب سے موقف ہے کہ حکومتی 17 فیصد جی ایس ٹی کے نفاذ کے بعد قیمت بڑھانا ضروری سمجھا ہے۔

عطاء سبحانی  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں