نواز، مریم، صفدر کی سزا معطلی کیخلاف نیب کی اپیل سماعت کیلئے منظور

اسلام آباد (پبلک نیوز) سابق وزیر اعظم میاں نوازشریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد محمد صفدر کی سزا معطلی کے خلاف نیب کی اپیل سماعت کے لیے سپریم کورٹ کی جانب سے منظور کر لی گئی تاہم رہائی کا فیصلہ برقرار ہے۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی، چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ خواجہ حارث آصف سعید کھوسہ کے فیصلہ پر انحصار کر رہے ہیں، کیوں نہ انہیں بینچ میں شامل کر لیا جائے۔

وکیل خواجہ حارث نے مسکراتے ہوئے کہا کہ چیف جسٹس بات کو دوسری طرف لے گئے وہ تو قانونی نقطہ پر بات کر رہے تھے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ خواجہ صاحب اب بے اعتمادی کی بیماری کو ختم ہونا چاہیے۔ خواجہ حارث نے  جواب دیا  کہ کوئی بے اعتمادی نہیں ہے۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیئے کہ ان کے ذہن میں 3 بنیادی سوال ہیں۔ دہشت گردی کا مقدمہ فوجداری ہوتا ہے، موجودہ کیس نیب قانون کا تھا، اصل سوال ضمانت نہیں سزا معطلی کا ہے۔ کیا سزا معطلی میں شواہد کا جائزہ لیا جا سکتا ہے؟ دیکھیں گے کیا ہائی کورٹ نے شواہد کا تفصیلی جائزہ لیا ہے۔

خواجہ حارث نے استدعا کی کہ کیس کی سماعت دسمبر کے دوسرے ہفتہ تک ملتوی کی جائے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ خواجہ صاحب اتنی محبت سے کی گئی بات کا انکار نہیں ہوتا۔ سماعت بارہ دسمبر تک ملتوی کر دی۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں