شہباز شریف کے داماد عمران علی کی جائیداد ضبطی کیس کا تحریری فیصلہ جاری

لاہور (پبلک نیوز) احتساب عدالت نے شہباز شریف کے داماد عمران علی کی جائیداد ضبطی  کیس کا تحریری فیصلہ جاری کر دیا۔ عدالت نے قرار دیا کہ  مجرم کو اشتہاری ہونے کے بعد بھی اعتراض داخل کرانے کےلیے ایک ماہ کا وقت دیا۔

آشیانہ اقبال کے بعد شہباز شریف صاف پانی کمپنی اسکینڈل میں بھی پھنس گئے۔ سابق وزیر اعلیٰ تین بار پیشی  کے باوجود نیب کی تفتیشی ٹیم کو مطمئن نہ کر سکے۔

نیب ذرائع کے مطابق صاف پانی کمپنی اسکینڈل میں شہباز شریف پر الزمات ہیں کہ انہوں نے 116واٹر فلٹریشن پلانٹس کا ٹھیکہ مہنگے داموں دینے کی منظوری دی۔ 50کڑورلاگت والے پلانٹس ڈیرھ ارب کے اخراجات سے لگے۔ صرف کنسلٹنسی کی مد میں تین ارب روپے خرچ کیے لیکن نتائج صفر رہے۔

شہباز شریف پر یہ بھی الزم ہے کہ منصوبہ کے لیے اجلاس دبئی میں ہوتے رہے جہاں من پسند افراد کو نوازا گیا۔ زیر حراست سابق سی ای او وسیم اجمل کا بیان بھی شہباز شریف کے لیے وبال جان بنا ہوا ہے۔

دوسری جانب احتساب عدالت نے شہباز شریف کے داماد عمران علی کی جائیداد ضبط کیس کا تحریری فیصلہ جاری کر دیا۔ تحریری فیصلے میں کہا گیا ہے کہ مجرم عمران علی کو مکمل موقع دیا کہ وہ اپنی بے گناہی ثابت کریں لیکن انہوں نے کوئی جواب جمع نہ کرایا۔

واضح رہے کہ جج محمد اعظم نے پنجاب پاور ڈویلپمنٹ کمپنی کی تحقیقات میں پیش نہ ہونے پر عمران علی یوسف کی جائیداد ضبط کرنے کا حکم دیا تھا۔

احمد علی کیف  6 روز پہلے

متعلقہ خبریں