اسلام آباد ہائیکورٹ: فلیگ شپ ریفرنس میں نواز شریف کو سزا کیلئے اپیل دائر

اسلام آباد(پبلک نیوز) اسلام آباد ہائی کورٹ میں احتساب عدالت کے خلاف نیب اور نوازشریف اپیلیں لے آئے، نیب کی نواز شریف کی بریت اور کم سزا کے خلاف اپیلیں دائر، نوازشریف کی درخواست پر نامکمل ہونے کا اعتراض لگ گیا۔

 

فلیگ شپ ریفرنس میں نواز شریف کی بریت اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج، نیب نے فلیگ شپ ریفرنس میں بھی نواز شریف کو سزا دینے کے لیے درخواست دائر کر دی، العزیزیہ ریفرنس میں نواز شریف کی سزا بڑھانے کے لیے بھی درخواست دائر کر دی، نیب کا موقف ہے کہ فلیگ شپ ریفرنس میں نواز شریف کی کرپشن کے ٹھوس ثبوت پیش کیے، نواز شریف کو بری کرنے کا فیصلہ کالعدم قرار دیا جائے۔

نیب نے موقف پیش کیا کہ محض شک کا فائدہ دے کر نواز شریف کو بری کرنا خلاف قانون ہے، اسلام آباد ہائیکورٹ نواز شریف کے خلاف شواہد پر سزا سنائے، العزیزیہ ریفرنس میں نواز شریف کے خلاف مقدمہ ثابت کیا۔ نواز شریف کو سات سال قید کی سزا کم ہے۔ بڑھائی جائے، کرپشن کا جرم ثابت ہونے پر نیب آرڈیننس میں دفعہ 9 اے 5 میں سزا 14 سال قید ہے، دونوں درخواستوں میں نواز شریف کو فریق بنایا گیا۔

 

نواز شریف کی جانب سے سزا معطلی کے لیے دائر کی گئی درخواست پر اعتراض، رجسٹرار آفس نے وقت کی کمی کی وجہ سے درخواست واپس کر دی،جواز پیش کیا کہ یہ مکمل درخواست نہیں مکمل کرنے کے بعد جمع کروائی جائے، رجسٹرار نے وکیل کو ہدایت کر دی۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں