نیب نے سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف اور بیٹوں کے گرد گھیرا تنگ کر دیا

لاہور(پبلک نیوز) سابق وزیراعلی پنجاب شہباز شریف ان کے بیٹے اور اپوزیشن لیڈر پنجاب حمزہ شہباز اور سلمان شہباز کے گرد بھی نیب کا شکجہ سخت ہونے لگا۔ شوگر ملز کے لئے مبینہ طور پر سرکاری خزانے سے چنیوٹ میں پل تعمیر کروانے کے خلاف انکوئریاں زیر تفتیش ہے۔

 

شریف خاندان کی مشکلات کم نہ ہوسکیں، نواز شریف، شہباز شریف، مریم نواز کے بعد اپوزیشن لیڈر پنجاب حمزہ شہباز بھی نیب کے ریڈار پر آگئے، نیب لاہور میں حمزہ شہبازاور سلمان شہباز کے خلاف صاف پانی کمپنی، امدن سے زائد اثاثہ جات بنانے اور رمضان شوگر ملز کے لئے مبینہ طور پر سرکاری خزانے سے چنیوٹ میں پل تعمیر کروانے کے خلاف انکوئریاں زیر تفتیش ہے۔

 

حمزہ شہباز پر صاف پانی کمپنی کی بورڈ میٹنگز میں غیر قانونی طور پر شرکت کر کے من پسند افراد کو ٹھیکے دینے کا الزام ہے جس میں وہ دو بار نیب میں پیش ہو کر بیان قلمبند کروا چکے ہیں۔ نیب ذرائع کے مطابق حمزہ شہباز اور سلمان شہباز نے متعدد ایسے اثاثے بنا رکھے ہیں جو انکی امدن سے مطابقت نہیں رکھتے جس کی تفتیشن کے لیے انہیں دو نومبر کو طلب کر رکھا ہے۔

 

حمزہ شہباز اور سلمان شہبازکے خلاف چنیوٹ میں رمضان شوگر مل کا پل تعمیر کرنے پر 20 کروڑ روپے سے زائد اخراجات سرکاری فنڈز سے استمعال کرنے پر نیب نے تحقیقات جاری کر رکھی ہیں اور اس کیس میں حمزہ شہبازاور سلمان شہباز کو 30اکتوبرکو بیان قلبمند کروانے کے لیے نیب نے طلب کیا گیا تھا۔ سلمان شہباز نیب کو بتاے بغیر لندن روانہ ہو گئے اور حمزہ شہباز پارٹی اجلاس میں شرکت کیلئے اسلام آباد روانہ ہو گئے۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں