نیب لاہور نے نصرت شہباز کے بنک اکاؤنٹس کی تفصیلات حاصل کر لیں

لاہور(شاکر محمود اعوان) نیب لاہور نے شریف فیملی کے جائیدادوں، اثاثہ جات کے بعد بنک اکاؤنٹس کی بھی تفصیلات اکٹھا کرنا شروع کر دیں۔ نصرت شہباز اربوں روپے کے اثاثہ جات ہونے کے باجود اپنی ساس ششمیم بیگم کی مقروض بھی نکل آئی ہیں۔

 

شریف فیملی کے گرد نیب کی تحقیقات کا دائرہ کار وسیع ہو گیا، نیب نے نصرت شہباز کے بنک اکاؤنٹس سمیت دیگر تفصیلات بھی حاصل کر لیں۔ پبلک نیوز کو موصول دستاویزات کے مطابق نصرت شہباز کے نام پر 5 بنک اکاؤنٹس سمیت 1 فارن کرنسی اکاؤنٹ بھی ہے۔ نجی بنک میں فارن کرنسی اکاؤنٹ امریکن ڈالر کا ہے اور سرکلر روڈ لاہور میں واقع ہے، دستاویزات کے مطابق نصرت شہباز کے اکاؤنٹ میں 1 کروڑ 89 لاکھ 57 ہزار 611 روپے موجود ہیں اور ان کے پاس 1کروڑ 69 لاکھ 34 ہزار 906 روپے نقد اور پرائزز بانڈز کی صورت میں موجود ہیں۔

 

دستاویزات کے مطابق نصرت شہباز نے اپنی ساس شمیم بیگم سے 6 لاکھ 50ہزار کا قرضہ لے رکھا اور اسکے ساتھ مسسز رافعیہ حسین، مسسز عابدہ، مسسز عظمت فاروق کی 40 لاکھ سے زائد کی مقروض ہیں۔ پبلک نیوز کو موصول دستاویزات میں بتایا گیا ہے کہ شہباز شریف نے اپنی اہلیہ نصرت شہباز کو کروڑوں روپے مالیت کے اثاثے تحفے میں دئیے، شہباز شریف نے اپنی اہلیہ کو 5 کروڑ 57 لاکھ 72 ہزار کی رقم تحفے میں دی ہے۔

 

ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ شہباز شریف کی جانب سے یہ رقم 2013ء سے 2018ء کے درمیان مختلف ٹرانزیکشن کے ذریعے منتقل کی گئی، نصرت شہباز 12 کمپنیوں میں 69 لاکھ 56 ہزار 500 شئیرز کی مالک ہیں، 96 ایچ ماڈل ٹاون اور مری کی رہائش نصرت شہباز کے نام ہیں اور نصرت شہباز کے نام قصور اور فیروز والا میں 810 کنال قیمتی زمین ہے۔ دستاویزات میں کہا گیا ہے کہ نصرت شہباز کے رمضان شوگر، مل، حمزہ سپنگ مل، کلثوم ٹیکسٹائل، محمد بخش ٹیکسٹائل، شریف پولٹری بزنس، شریف ڈیری، کوالٹی چکن، شریف ملک پروڈکٹس، کرسٹل پلاسٹک، العریبہ شوگر مل میں بھی شراکت دار ہیں۔

عطاء سبحانی  3 روز پہلے

متعلقہ خبریں