نیب لاہور نے اورنج لائن ٹرین منصوبے میں مبینہ کرپشن کی تحقیقات شروع کر دی

لاہور(مستنصر عباس) اورنج لائن ٹرین کا منصوبے میں ہونے والی اربوں روپے کی مبینہ کرپشن کی باقاعدہ نیب نے تحقیقات شروع کر دیں۔ ایل ڈی اے سمیت متعلقہ اداروں نے سینکڑوں فائلوں پر مشتمل ریکارڈ قومی احتساب بیورو لاہور کو جمع کرا دیا۔ ریکارڈ اتنا زیادہ تھا کہ منی ٹرالی پر رکھا کر نیب ٹھوکر نیاز بیگ پہنچانا گیا۔

 

نیب ذرائع کے مطابق قومی احتساب بیورو لاہور نے پاکستان کی پہلی انٹرہ سٹی اورنج لائن ٹرین منصوبے کی تحقیقات شروع کر دی۔ مختلف نیب تحقیقاتی آفسران پر مشتمل ٹیم نے ملنے والے ریکارڈ کی چھان بین شروع کر دی۔ ذرائع کے مطابق ایل ڈی اے نے اورنج لائن سے متعلقہ ریکارڈ نیب کو جمع کروا دیا۔ چوبرجی تا علی ٹاؤن پیکچ ٹو کا ریکارڈ نیب کو فراہم کیا گیا۔ ریکارڈ میں تعمیراتی ٹھیکوں، اراضی کی خریداری کی تصیلات نیب کو پہنچائی گئیں۔ سینکڑوں صفحات پر مشتمل ریکارڈ کی کاپیاں منی ٹرالی پر پہنچائی گئیں۔

 

نیب مبینہ بے ضابطگیوں پر اورنج لائن میٹرو ٹرین میں کڑوڑوں کی بے ضابطگیوں پر تحقیقات کر رہا ہے، تحقیقاتی ٹیم حاصل ہونے والے ریکارڈ کی روشنی میں ہی یہ فیصلہ کرے گی کی اس میں ملوث سرکاری اداروں آور سابق وزیراعلی پنجاب میاں شہباز شریف کو طلب کیا جائے گا۔ سابق وزیراعلی پنجاب میاں شہباز شریف برملا اس بات کا اظہار کر چکے ہیں کہ انہوں نے اس پراجکیٹ میں نہ ایک دھیلے کی کرپشن کی ہے اور نہ ہی کرنے دی ہے جبکہ نیب زرائع کا کہنا ھے کہ اورینج لائن ٹرین منصوبہ چین کرپشن ہوئی ھے اور بہت جلد اس حوالے سے اہم پیش رفت یو گی۔

عطاء سبحانی  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں