نیب لاہور کا چھاپہ، سابق سرکاری افسر کے گھر سے 33کروڑ روپے برآمد

لاہور (پبلک نیوز) قومی احتساب بیورو (نیب) لاہور کے چھاپے میں سابق سرکاری افسر کے گھر سے 33کروڑ روپے برآمد ہو گئے۔ ڈی جی نیب نے ملزم کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں کی انکوائری کا حکم دے دیا ہے۔

نجی منی ایکسچینج کے پارٹنر اور گریڈ 16 کے سابق افسر خواجہ وسیم بٹ بھی نیب کے ریڈار پر آ گئے۔ ذرائع کے مطابق نیب نے خواجہ وسیم بٹ کو ان کی رہائش گاہ ای ایم ای سوسائٹی سے حراست میں لیا، تین گھنٹے  تک تفتیش کے بعد چھوڑ دیا۔

نیب کے مطابق خواجہ وسیم بٹ کے گھر سے 33 کروڑ روپے  سمیت مختلف پراپرٹیز کی رجسٹریاں بھی قبضے میں لی گئیں ۔ 10کرور روپے ملکی کرنسی، 17کروڑ کے پرائز بانڈ، تین کڑور مختلف ممالک کی کرنسی تھی۔

خواجہ وسیم بٹ کے چھوٹے بھائی خواجہ شہزاد بٹ پر بعض لوگوں کے لیے منی لانڈرنگ کرنے کا الزام ہے۔ نیب کی جانب سے تفتیش شروع ہونے کے بعد وہ دبئی فرار ہو گئے جس کے بعد نیب نے ان کے بھائی خواجہ وسیم بٹ کے گھر پر چھا پہ مارا۔

ڈی جی نیب نے لاہور نے خواجہ وسیم بٹ کے آمدن سے زائد اثاثہ جات کے حوالے سے انکوئری کرنے کے احکامات جاری کر دیئے۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں