مالم جبہ کیس: وزیراعظم کے پرنسپل سیکرٹری اعظم خان کا نیب پشاور میں بیان ریکارڈ

پشاور (پبلک نیوز) وزیراعظم کے پرنسپل سیکرٹری اعظم خان نے مالم جبہ کیس میں نیب پشاور کو بیان ریکارڈ کرا دیا۔ مالم جبہ کیس میں سابق وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک کو بھی باضابطہ طور پر شامل تفتیش کیے جانے کا امکان ہے۔ نیب کے مطابق مالم جبہ اراضی کیس میں بھی آشیانہ ہاؤسنگ اسکیم کیس کی طرح اختیارات کا ناجائز استعمال کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق مالم جبہ کیس میں وزیراعظم کے پرنسپل سیکرٹری اعظم خان نیب پشاور میں پیش ہوئے، اعظم خان نے اپنا ابتدائی بیان ریکارڈ کرایا۔ نیب کے مطابق مالم جبہ کیس میں آشیانہ ہاؤسنگ اسکیم اسکینڈل کی طرح اختیارات کا ناجائز استعمال ہے، مالم جبہ میں275  ایکڑ زمین غیر قانونی طور پر الاٹ کی گئی۔ کیس میں سابق وزیراعلیٰ کے پی اور موجود وفاقی وزیردفاع پرویز خٹک کو بھی ناضابطہ طور پر شامل تفتیش کیے جانے کا امکان ہے۔

پرویز خٹک پر الزام ہے کہ انہوں نے اپنے دور میں اعظم خان کی سفارش پر لیز پالیسی میں نرمی کر کے زمین تینتیس سال کی لیز پر دی تھی۔ جبکہ محکمہ قانون نے زمین 33 سال کی لیز پر دینے کی مخالفت کی اور 15 سال کے لیے لیز پر دینے کا کہا۔ ذرائع کے مطابق مالم جبہ میں 275 ایکڑ زمین ایک کروڑ بیس لاکھ سالانہ کرائے پر لیز کی گئی۔

نیب کے مطابق محکمہ جنگلات کی 270 ایڑ زمین کو غیر قانونی طور پر مالم جبہ ریزورٹ پراجیکٹ میں شامل کیا گیا۔ جو کےپی فاریسٹ ایکٹ 2002 کی سنگین خلاف ورزی تھی۔ پپرا رولز کی خلاف ورزی کر کے پراجیکٹ سیمینز گروپ آف کمپنیز کو دیا گیا۔ سیمینز گروپ آف کمپنیز کو کنٹریکٹ دینے کے لیے پیش کش کی۔ آخری تاریخ 31 مارچ سے بڑھا کر 10 اپریل کر دی گئی۔

احمد علی کیف  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں