سندھ میں اربوں روپے مالیت کی بے نامی زمینیں الاٹ کیے جانے کا انکشاف

کراچی (پبلک نیوز) بے نامی اکاؤنٹ کے بعد اربوں روپے مالیت کی بے نامی زمینوں کا کیس بھی سامنے آ گیا۔ نیب نے گرفتار سابق ڈی سی ملیر کی نشاندہی پر جائیدادوں کا سراغ لگا لیا۔

تفصیلات کے مطابق پہلے اکاؤنٹس میں خورد برد کا پردہ چاک ہوا پھر اربوں روپے مالیت کی بے نامی زمینوں کا پینڈورا باکس کھل گیا۔ نیب نے گرفتار سابق ڈی سی ملیر کی نشاندہی پر جائیدادوں کا سراغ لگا لیا۔ اربوں روپے مالیت کی زمینیں گھارو میرپور سا کرو اور حیدر آباد میں الاٹ کرنے کا انکشاف ہو گیا۔ گھارو ٹھٹھہ اور میر پور میں جعلی کھاتے کے ذریعہ زمینیں کی الاٹمنٹ کی گئیں۔

زمینوں کی الاٹمنٹ منسوخ کرانے کے لیے اتھارٹی سے نیب حکام کی جانب سے رابطہ کیا گیا۔ سابق ڈی سی ملیر نے دوران تفتیش الاٹمنٹ سسٹم اور فنڈز میں کرپشن سے متعلق بھی اہم انکشافات کر دئیے۔ حیدر آباد میں الاٹ زمینوں کے مالکان سے بھی تفتیش کا فیصلہ کر لیا گیا۔ 

احمد علی کیف  8 ماه پہلے

متعلقہ خبریں