نیب نے نصرت شہباز، تہمینہ درانی کیخلاف انویسٹی گیشن کی منظوری مانگ لی

لاہور(شاکر محمود اعوان) شریف فیملی کے لیے ایک اور بری خبر، نیب لاہور نے شہباز شریف کی اہلیہ نصرت شہباز اور تہمینہ دورانی کے خلاف بھی انویسٹی گیشن کی منظوری مانگ لی، شہباز شریف نے اپنی اہلیہ تہمینہ دارانی اور نصرت شہباز کو کرڑوں روپے مالیت کے اثاثے تحفے میں دیئے۔

 

سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کروڑوں روپے کے اثاثے اور بھاری رقم اپنے فیملی اراکین کو تحفے میں دی، نیب نے تہمینہ درانی اور نصرت شہباز کو بھی ان کے اثاثوں سے متعلق سوالنامہ بھیج دیا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ شریف فیملی آمدن سے زائد اثاثہ جات میں نیب کی جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم کو مطمئن نہیں کر سکی، جس پر چیئرمین نیب نے شہباز شریف، سلمان شہباز اور حمزہ شہباز کے خلاف انوسٹی گیشن کی منظوری دے دی ہے۔

 

ذرائع کا کہنا ہے کہ چیئرمین نیب سے نصرت شہباز اور تہمینہ دارانی کے خلاف بھی انکوائری کو انویسٹی گیشن میں تبدیل کرنے کے لیے اجازت مانگی گئی ہے۔ شہباز شریف نے نصرت شہباز اور تہمینہ دارانی کو کروڑوں روپے مالیت کے اثاثے تحفے میں دئیے، جن سے متعلق وہ نیب ٹیم کو مطمئن نہیں کر سکے۔ پبلک نیوز کو موصول دستاویزات کے مطابق شہباز شریف نے اپنی اہلیہ کو 5 کروڑ 57 لاکھ 72 ہزار، کی رقم تحفے میں دیئے۔ شہباز شریف نے تہمینہ درانی کو گوادر، مری اور ہری پور میں 6 قیمتی جائیدادیں اور ڈی ایچ اے فیز 5 میں ایک لگژری گھر بھی تحفے میں دیا۔

 

دستاویزات کے مطابق نصرت شہباز 12 کمپنیوں میں 69 لاکھ 56 ہزار 5 سوشئیرز کی مالک ہیں،96 ایچ ماڈل ٹاؤن، مری کی رہائش اور قصور اور فیروز والا میں 810 کنال کی زمین نصرت شہباز کے نام ہے۔ دوسری جانب لاہور نیب کے ڈرائیور ممتاز حسین کی مدعیت میں حمزہ شہباز کے ذاتی گارڈ کے خلاف تھانہ ماڈل ٹاؤن میں مقدمہ درج کر لیا گیا ہے، مقدمہ میں آتشی اسلحہ سے زدو کوب، کار سرکار میں مداخلت کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔

عطاء سبحانی  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں