منی لانڈرنگ کیس میں نیب نے سلمان شہباز کی جائیداد ضبط کر لی

لاہور(شاکر محمود اعوان) منی لانڈرنگ کیس میں نیب نے شہباز شریف کے بیٹے سلمان شہباز کی جائیداد ضبط کر لی۔ احتساب عدالت نے نیب کو جائیدادیں قرقی کے حوالے متعلقہ محکموں کو آگاہ کر کہ رپورٹ جمع کرانے کی ہدایت کر دی۔

 

احتساب کے جج امیر محمد نے نیب کی درخواست پر سماعت کی۔ دوران سماعت نیب کے تفتشی نے بتایا کہ عدالتی احکامات پر سلمان شہباز کی طلبی کے حوالے سے ان کی رہائش گاہ کے باہر اور عدالت کے دروازے کے باہر اشتہارات لگائے گئے۔عدالتی حکم پر عمل کرتے ہوئے سلمان شہباز کی جائیدادوں کو ضبط کر لیا گیا ہے۔ عدالت نے تفتشی سے سوال کیا کہ جائیدادوں کی قرقی کے حوالے سے متعلقہ محکموں کو آگاہ کیا گیا ہے؟ جس پر تفتشی افسر نے کہا کہ متعلقہ محکموں کو آگاہ کر دیا گیا ہے۔

 

جس پر عدالت نے نیب حکام کو حکم دیا کہ سلمان شہباز کی تمام منعقولہ اور غیر منقولہ جائیدادوں کی قرقی سے متعلق عمل درآمد رپورٹ 25 اکتوبر کو پیش کرنے کا حکم دے دیا۔ نیب پراسیکیوٹر حافظ اسد اللہ اعوان نے سلمان شہباز کی جائیداد ضبط کرنے اور اشتہاری قرار دینے کی استدعا کر رکھی ہے۔ سلمان شہباز کو منی لانڈرنگ میں تفتیش کے لیے طلب کیا۔ سلیمان شہباز تفتیش کے لیے پیش ہونے کی بجائے فرار ہو گئے۔

عطاء سبحانی  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں