نیب لاہور کا شہباز شریف کیخلاف ایک اور انکوائری کا آغاز

 

لاہور (پبلک نیوز) نیب لاہور نے سابق وزیر اعلیٰ شہباز شریف کے خلاف ایک اور انکوائری کا آغاز کر دیا ہے۔ نیب ذرائع کے مطابق 2014 میں میبنہ طور پر محکمہ اوقاف کے افراد کی ملی بھگت سے قیمتی زمین کوڑیوں کے بھاؤ فروخت کر دی گئی۔

 

تفصیلات کے مطابق سابق وزیر اعلیٰ شہباز شریف کے خلاف ایک اور انکوائری شروع ہو گئی۔ محکمہ اوقاف کی زمین اربوں روپے مالیت کی زمین کوڑیوں کے بھاؤ فروخت کرنے کی منظوری دینے کے خلاف نیب نے تحقیقات کا آغاز کردیا۔

نیب ذرائع کا کہنا تھا کہ سابق وزیر اعلیٰ پنجاب نے 2014 میں گالف روڈ جی او آر میں حضرت شاہ شمس قادریؒ کے دربار سے ملحقہ 33 کنال 18 مرلے کی زمین 900 روپے فی مرلہ کے حساب سے فروخت کرنے کی اجازت دی۔ حضرت شاہ شمسؒ کے دربار سے ملحقہ اراضی 1960 میں ایک نوٹیفکیشن کے زریعے محکمہ اوقاف کے نام کی گئی تھی۔ محکمہ اوقاف نے 1960 میں زمین 33 سال کے لیے ٹھیکے پر دی اور 1988 میں لیز ختم ہونے پر دوبارہ زمین 99 سال کےلیے لیز پر دے دی گئی۔

 

نیب ذرائع کے مطابق 2014 میں میبنہ طور پر محکمہ اوقاف کے افراد کی ملی بھگت سے قیمتی زمین کوڑیوں کے بھاؤ فروخت کر دی گئی جس سے قومی خزانے کو نا قابل تلافی نقصان ہوا۔ نیب زرائع کا کہنا تھا کہ جلد سابق وزیر اعلی سمیت ملوث افراد کو طلب کر کے تحقیقات کی جائیں گی۔

احمد علی کیف  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں