اثاثہ جات کیس میں خسرو بختیار، مخدوم ہاشم جواں بخت کے خلاف تحقیقات کا آغاز

لاہور(ادریس شیخ) وفاقی وزیر پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ اور صوبائی وزیر خزانہ مخدوم ہاشم جواں کیلئے بری خبر، نیب ملتان نے انکوائری شروع کر دی۔ خسرو بختیار اور ہاشم جواں بخت پر اصل اثاثے چھپانے کا الزام ہے۔

 

نیب لاہور کو وفاقی وزیر پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ اور پنجاب کے وزیر خزانہ ہاشم جواں بخت کے خلاف کرپشن انکوائری کی درخواستیں دی گئی تھیں، نیب لاہور نے اثاثوں سے متعلق دونوں درخواستیں ابتدائی سکروٹنی کے بعد نیب ملتان کو منتقل کر دی ہیں۔ نیب ملتان نے خسرو بختیار اور ہاشم جوان بخت کے خلاف انکوائریز شروع کرتے ہوئے ریکارڈ کی جانچ پڑتال شروع کر دی ہے۔

 

خسرو بختیار اور ہاشم جواں بخت پر اصل اثاثے چھپانے کا الزام ہے اور صوبائی وزیر خزانہ ہاشم جواں بخت پر اتحاد شوگر ملز، میگا پراجیکٹس اور ڈی ایچ اے لاہور میں کرپشن میں ملوث ہونے کا الزام ہے، نیب کو موصول انکوائری سے متعلق درخواستوں میں الزام عائد کیا گیا ہے کہ ہاشم جوان بخت نے زرعی اراضی بھی ظاہر نہیں کی، کروڑوں روپے کی کرپشن کی، خسرو بختیار نے بھی اپنے اصل اثاثے چھپائے، لہذا نیب ان کے خلاف کارروائی کرے۔

عطاء سبحانی  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں