نیب نے آصف زرداری کی ضمانت کیخلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں جواب جمع کرا دیا

اسلام آباد(فیصل ساہی) سابق صدر آصف زرداری کی درخواست ضمانت، نیب کی مخالفت، سابق صدر آصف علی زرداری کے ہاتھ صاف نہیں، کسی ریلیف کے بھی مستحق نہیں، اسلام آباد ہائیکورٹ میں نیب نے جواب جمع کرا دیا۔

 

نیب نے جعلی بینک اکاونٹس اور بلٹ پروف گاڑیوں کے کیس میں آصف زرداری کو ٹف ٹائم دینے کی تیاری کر لی، اپنا جواب اسلام آباد ہائی کورٹ میں جمع کرادیا۔ جعلی بینک اکاونٹس کیس میں جواب میں مؤقف اختیار کیا ہے کہ ملزم نے درخواست ضمانت میں غلط بیانی کی، اپنا اثر ورسوخ استعمال کیا اور نیشنل بینک سے ڈیڑھ ارب کا قرض لے کر دھوکہ دہی سے فرنٹ کمپنی پیرتھینون بنائی، ملزم کسی ریلیف کا مستحق نہیں۔

 

بلٹ پروف گاڑیوں کے کیس میں نیب نے جواب دیا کہ یو اے ای اور لیبیا سے صدر پاکستان کو گاڑیاں تحفے میں ملیں۔ قانون کے مطابق گاڑیاں سرکاری ملکیت تھیں، لیکن ملزم نے اس وقت کے وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کی ملی بھگت سے گاڑیاں حاصل کیں اور پندرہ فیصڈ ڈیوٹی بھی جعلی بینک اکاؤںس سے ادا کی۔ نیب نے دونوں مقدمات میں آصف علی زرداری کی ضمانت مسترد کرنے کی استدعا کر دی اسلام آباد ہائی کورٹ نے دس اپریل کو آصف علی زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کی عبوری ضمانت میں انتیس اپریل تک توسیع کی تھی۔

عطاء سبحانی  4 ماه پہلے

متعلقہ خبریں