قومی اثاثوں کو کوڑیوں کے بھاؤ فروخت کرنے والوں کیخلاف نیب کا گھیرا تنگ

لاہور(شاکر محمود اعوان) جس کا جہاں بس چلا، حکومتی خزانے کو اپنے خزانے میں شامل کر لیا، پنجاب منرل اینڈ ماینز کا کلرک کڑوڑوں روپے کے اثاثوں کا مالک کیسے بنا، نیب نے تحقیات کا آغاز کر دیا۔

 

نیب نے کرپٹ عناصر کے بعد حکومتی خزانے کو اپنا خزانہ بنانے اور قومی اثاثوں کو کوڑیوں کے بھاؤ فروخت کرنے والوں کیخلاف بھی گھیرا تنگ کرلیا ہے۔ نیب نے خوشاب کے شہری راشد ملک کی درخواست پر پنجاب منرل اینڈ مائنز کے کلرک عمران ظہور سمیت دیگر افراد کیخلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات بنانے پر تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔

 

نیب کو دی گئی درخواست میں شہری نے الزام لگایا کہ کلرک کی پوسٹ پر تعینات عمران ظہور کا رہن سہن پر تعیش ہے، عمران ظہور نے خوشاب میں 3 موبائل شاپس خرید رکھی ہیں۔ ملزم نے 20 ایکٹر قیمتی زمین موضع سندرال خوشاب میں بھی خریدی ہے۔ عمران ظہور نے اپنے والد کے نام پر 9 ایکٹر کی زرعی زمین بھی خرید رکھی ہے اور اس نے 1 کروڑ سے زائد کے اثاثے آمدن سے زائد بنا رکھے ہیں۔

 

نیب ذرائع کے مطابق ابتدائی تفتیش کے دوران معلوم ہوا ہے کہ عمران ظہور کا رہن سہن اور اسکے اثاثے اسکے آمدن سے زائد ہیں۔ نیب نے تحقیات کا دائرہ کار وسیع کرتے ہوئے متعلقہ محمکوں سے عمران ظہور کے اثاثوں سے ملتعلق تصدیق شدہ دستاویزات طلب کرلیں ہیں۔

عطاء سبحانی  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں