'آرطیمس' 2024 میں انسان کو چاند پر لے کر جائے گا

پبلک نیوز: ناسا نے چاند پر مشن بھیجنے کے لیے نام  دے دیا۔ مشن کا نام 'آرطیمس' رکھا گیا ہے۔ ناسا سربراہ نے نئے مشن کی تکمیل کے لیے ایک ارب 60 کروڑ ڈالر کی رقم کا مطالبہ کر دیا۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مطلوبہ کی رقم بجٹ میں شامل کر کے ناسا کو دینے کا عندیہ دے دیا۔

 

امریکی خلائی ایجنسی ناسا نے چاند پر بھیجے جانے والے مشن کو نام دے دیا۔ ناسا کے مطابق نئے مشن کا نام 'آرتیمس' ہو گا۔ آرتیمس یونانی افسانوی چاند کی دیوی اور اپولو کی جڑواں بہن کے نام سے منسوب کیا گیا ہے۔ ناسا کی جانب سے 2024ء تک چاند کی سطح پر انسان کو بھیجا جائے گا۔

 

ناسا نے نئے مشن کے لیے رقم کی کمی کا اعتراف کر لیا۔ ناسا کے سربراہ جم برائڈنسٹائن کے مطابق خلائی گاڑی کی تیاری کے لیے ہمیں ایک ارب 60 کروڑ امریکی ڈالر کی اضافی ضرورت ہے۔

 

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بجٹ میں مزید ایک ارب 60 کروڑ ڈالر شامل کرنے کا اعلان کر دیا۔ ٹرمپ نے کہا کہ اضافی رقم ناسا کو دی جائے گی۔ امریکی صدر نے کہا کہ ہم چاند پر واپس جا رہے ہیں اور اس کے بعد مارس پر جائیں گے۔ اضافی رقم ناسا کے سالانہ بجٹ 21 ارب 50 کروڑ ڈالر میں شامل کیئے جائیں گے۔

حارث افضل  4 ماه پہلے

متعلقہ خبریں