العزیزیہ ریفرنس میں نواز شریف کی سزا اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج

اسلام آباد(فیصل ساہی) نواز شریف نے العزیزیہ سٹیل مل ریفرنس میں سزا کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کر دیا، سابق وزیراعظم کا کہنا ہے کہ احتساب عدالت میں طویل ٹرائل چلا لیکن ان کا موقف سنا گیا نہ احتساب عدالت نے فراہم کردہ شواہد کی درست تشریح کی، سزا معطل کر کے ضمانت پر رہا کیا جائے۔

 

نواز شریف کے وکلاء نے اسلام اباد ہائی کورٹ میں احتساب عدالت کے فیصلے کیخلاف اپیل جمع کرا دی، نواز شریف کی جانب سے ان کے وکیل خواجہ حارث نے درخواست دائر کی، درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ شفاف ٹرائل پر پاکستانی کا حق ہے اسلام اباد ہائی کورٹ سے انصاف کی توقع ہے۔

24دسمبر 2018 کے فیصلے کو کالعدم دینے کی استدعا، احتساب عدالت کے فیصلے میں قانونی سقم موجود ہے۔ درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ نواز شریف کی سزا معطل کر کے انہیں ضمانت پر رہا کیا جائے، درخواست میں نیب کو بھی فریق بنایا گیا ہے۔ احتساب عدالت نے 24 دسمبر کو فیصلے میں العزیزیہ اسٹیل میں سابق وزیراعظم نواز شریف کو مجرم قرار دیتے ہوئے سات سال قید بامشقت کی سزا سنائی تھی۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں