نواز شریف نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں طبی بنیاد پر ضمانت کی درخواست دائر کر دی

اسلام آباد(پبلک نیوز) ایک اور درخواست ضمانت، سابق وزیراعظم نوازشریف نے تمام بیماریاں گنا دیں، اسلام آباد ہائی کورٹ میں دائر درخواست میں طبی بنیادوں پر ضمانت دینے کی استدعا، موقف ہے کہ ٹیسٹ بھی نواز شریف کی جان لیوا بیماری کو ظاہر کرتے ہیں، علاج بیرون ملک ہی ممکن ہے۔

 

اسلام آباد ہائی کورٹ میں خواجہ حارث کے ذریعے دائر سابق وزیراعظم نواز شریف کی درخواست ضمانت، طبی وجوہات کو بنیاد بنا کر دائر کی گئی درخواست میں درخواست میں چیئرمین نیب، سپرنٹنڈنٹ جیل کوٹ لکھپت اور احتساب عدالت کو فریق بنایا گیا۔ برطانیہ اور امریکہ کے ماہرین طب کی رائے ہے کہ تناؤ کی کیفیت سے نواز شریف کی جان کو خطرہ ہو سکتا ہے۔ ڈاکٹرز کی رائے بھی درخواست میں شامل ہے اور بیماریوں کی تفصیل بھی۔

درخواست میں مؤقف اپنایا گیا ہے کہ علاج کے لئے بیرون ملک جانا ضروری ہے، ان کا موقف ہے کہ پاکستان اور بیرون ملک کے ڈاکٹرز اس بات پر متفق ہیں کہ جیل میں علاج ممکن نہیں۔ چھ ہفتے کی ضمانت کے دوران کرائے گئے ٹیسٹ بھی نواز شریف کی جان لیوا بیماری کو ظاہر کرتے ہیں۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں