نواز شریف علاج کرانے کے لیے ایئرایمبولنس کے ذریعے لندن پہنچ گئے

لاہور(پبلک نیوز) نواز شریف علاج کے لیے لاہور سے لندن پہنچ گئے، سابق وزیراعظم ہیتھرو ائیرپورٹ سے ایون فیلڈ اپارٹمنٹس میں منتقل ہو گئے۔ شہباز شریف کا کہنا ہے کہ طبی ماہرین نواز شریف کا آج ہارلے اسٹریٹ کے نجی کلینک میں معائنہ کریں گے، حسین نواز نے کہا والد کی صحت میں بہتری اولین ترجیح ہے، علاج کے لئے امریکا جانا چاہیئے۔

 

لاہور سے ائیر ایمبولینس کے ذریعے لندن تک کا سفر، نواز شریف لاہور ہائی کورٹ کی اجازت کے بعد علاج کی غرض سے لندن پہنچ گئے۔ قطر ائیر ویز کی ایئر ایمبولینس میں شہباز شریف اور سابق وزیراعظم کے ذاتی معالج ڈاکٹرعدنان بھی ساتھ لندن پہنچے۔ نواز شریف کو ہیتھرو ائیرپورٹ سے پارک لین میں ان کی رہائش گاہ ایون فیلڈ اپارٹمنٹس لایا گیا، جہاں مقامی لیگی قیادت اور کارکنوں نے پارٹی قائد کا استقبال کیا۔

شہباز شریف نے بتایاکہ نواز شریف کو دوران سفر کسی پیچیدگی کا سامنا نہیں ہوا، آج ڈاکٹر کے ساتھ اپائنٹمنٹ ہے، سابق وزیراعظم انشاء اللہ صحت یاب ہو کر وطن واپس لوٹیں گے۔ نواز شریف کے بیٹے حسین نواز نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ سب سے پہلی ترجیح والد کا علاج کروانا ہے، معاملے کو سیاسی رنگ نہیں دینا چاہیئے۔ انہوں نے برطانیہ میں علاج پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میاں صاحب کو امریکا لے جانے پر غور کیا جا رہا ہے۔

نواز شریف کے سمدھی اسحٰق ڈار نے کہا کہ سابق وزیراعظم کی بیماری کی تشخیص ضروری ہے تاکہ علاج کی سہولیات کا جائزہ لیا جا سکے۔ مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ نواز شریف کا علاج جلد شروع کر دیا جائے گا، قوم سابق وزیراعظم کی جلد صحت یابی کے لئے دعا کرے۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں