نیب لیگی رہنماؤں کی جائیدادوں کی چھان بین کرتا رہتا ہے:نواز شریف

اسلام آباد(پبلک نیوز) سابق وزیراعظم نوازشریف کا کہنا ہے کہ ملک کو اندھیروں سے نکالا، فارن ایکسچیج کو بڑھایا۔ افسوس اس بات کا ہے، ہمارے کاموں کے نتیجے میں ہمیں جیل بھیجا گیا۔ چائینہ کے تعاون سے جے ایف سیون ٹین کو ہم نے بنایا۔

 

احتساب عدالت اسلام آباد میں فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت میں وقفہ کے دوران نواز شریف کی صحافیوں کی غیر رسمی گفتگو ہوئی، جس میں انہوں نے کہا کہ ہماری کوئی ایک فیلڈ میں کارگردگی نہیں ہے۔ بہتان تراشی والی سیاست میری فطرت نہیں اور میں گالم گلوچ والی سیاست بھی نہیں کرتا۔

 

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ہماری حکومت میں لوگوں کو دال چنا چاول سب کچھ سستا ملتا تھا۔ مجبوراً پوچھ رہا ہوں، کیونکہ قوم جاننا چاہتی ہے یہ پیسہ کہاں سے آیا کس نے دیا۔ نیب سے علیمہ خان کی جائیداد کی چھان بین کا مطالبہ کر دیا، نوازشریف کا کہنا تھا کہ نیب لیگی رہنماﺅں کی جائیدادوں کی چھان بین کرتا رہتا ہے۔ نیب اب علیمہ خان کی جائیداد بھی تحقیقات کرے۔

 

نواز شریف کا کہنا تھا کہ این آراو لینا ہوتا تو لندن سے پاکستان نہ آتے، شہبازشریف، مجھے، مریم سمیت صفدر کو جیل جانا پڑا۔ پاکستان کی ترقی کے لیے ہر میدان میں ترقی کی۔ پاکستان کو گرے لسٹ میں ڈالا گیا تھا، پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنے میں ہماری کارگردگی شامل ہے۔ چائینہ کے ساتھ دفاعی اور معاشی معائدے کیے اور پاکستان کو ترقی کی راہ میں گامزن کیا۔ ہم نے پاکستان کی بہت خدمت کی ہے، پھر بھی آپ لوگ بولتے ہو میں کچھ نہیں بو لتا۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں