سوئی سدرن گیس حکام، سی این ایسوسی ایشن کے درمیان مذاکرات ناکام

کراچی(پبلک نیوز) سوئی سدرن گیس حکام اور سی این ایسوسی ایشن کے درمیان مذاکرات ناکام ہو گئے، سی این جی اسٹیشنز کو فوری گیس بحال کرنے کا کوئی وقت نہ دیا گیا۔ سی این جی ایسوسی ایشن نے سوئی سدرن حکام کو چوبیس گھنٹے کی مہلت دیے دی۔

 

سندھ میں غیرمعینہ مدت تک سی این جی کی بندش، پبلک ٹرانسپورٹ کا پہیہ جام، بسوں سے دفاتر جانے والے شہری رل گئے۔ پبلک ٹرانسپورٹ سڑکوں سےغائب۔ یس بندش کے خلاف سی این جی ایسوسی ایشنز کا سوئی سدرن کے دفتر کے باہر پرامن احتجاج۔ ایس ایس جی دفتر کے باہر پولس کی نفری تعینات۔

 

سوئی سدرن حکام سے سی این جی ایسوسی ایشن کے چیئرمین عبد السمیع خان کی سربراہی میں 14 رکنی وفد نے مذاکرات کیے مذاکرات میں سی این جی کی غیر معینہ بندش کے فیصلے کو پاس لینے کا مطالبہ سامنے رکھ دیا۔ سوئی سدرن حکام نے سی این جی ایسوسی ایشن کے مطالبات مانتے ہوئے شرط بھی رکھ دی۔ انہوں نے کہا گیس سپلائی بحال ہوئی تو ہی سی این جی کو گیس فراہم کی جائے گی۔

 

سی این جی ایسوسی ایشن کے چیئرمین عبد السمیع خان نے کہا گیس کی غیر معینہ بندش کا فیصلہ واپس لے لیا گیا لیکن گیس کب بحال کی جائے گی یہ نہیں بتایا گیا۔ سوئی گیس حکام کا کہنا ہے دو گیس فیلڈ میں تکنیکی خرابی کے باعث گیس کی طلب اور رسد میں نمایاں کمی وقع ہوئی ہے۔ جسکی وجہ سے نجی بجلی گھروں کو گیس کی سپلائی غیر معینہ مدت تک کیلئے بند کردی گئی ہے جبکہ ترجیح بنیادوں پر گھریلو صارفین کو گیس فراہم کرنا فوکس ہے۔

عطاء سبحانی  11 ماه پہلے

متعلقہ خبریں