پاکستان، ایف اے ٹی ایف کے مابین مذاکرات آج سے چین میں شروع ہوں گے

اسلام آباد(پبلک نیوز) پاکستان اور ایف اے ٹی ایف کے درمیان فیصلہ کن مذاکرات آج سے چین میں شروع ہو رہے ہیں۔ پاکستانی وفد کی قیادت سیکریٹری خزانہ یونس ڈھاگہ کریں گے۔ ایف اے ٹی ایف کو مدارس میں تعلیمی اصلاحات اور11 مذہبی تنظیموں پرپابندی کی رپورٹ پیش کی جائے گی۔ پاکستان نے بھارت کے خلاف بھرپور جوابی حکمت عملی بھی تیار کر رکھی ہے۔

 

نیوز ذرائع کے مطابق پاکستان اور ایف اے ٹی ایف کے درمیان مذاکرات آج چین کے شہر بیجنگ میں شروع ہوں گے، ایف اے ٹی ایف اور وزارت خزانہ حکومت پاکستان کے مذاکرات کل شروع ہوں گے۔ پاکستان وفد کی قیادت سیکریٹری خزانہ یونس ڈھاگہ کریں گے۔ پاکستانی وفد وزارت داخلہ، ایف آئی اے، قانون نافذ کرنیوالے اداروں کی رپورٹ پیش کرے گا۔ وفد میں وزارت داخلہ، ایف آئی اے وزارت خارجہ، ایس ای سی پی حکام شریک ہوں گے۔ نیکٹا، اسٹیٹ بینک آف پاکستان سمیت دیگر اعلی حکام بھی شریک ہوں گے۔

 

ذرائع نے بتایا کہ پاکستان میں مدارس کی تعلیمی اصلاحات، 11 مذہبی تنظیموں پر پابندی کی رپورٹ پیش کی جائے گی۔ اسٹیٹ بنک کی جانب سے مشکوک ترسیلات کی گرفت پر اہداف رپورٹ گزشتہ ماہ بھجوائی گئی تھی، کلعدم تنظیموں کے خلاف کریک ڈاؤن کے اہداف پر عملدرآمد رپورٹ بھی پاکستان نے بھجوائی تھی۔ پاکستان 16نکاتی ایف اے ٹی ایف کے اہداف پر پراگریس رپورٹ پیش کرے گا۔ اسٹیٹ بینک آف پاکستان اور ایف آئی اے کی مشکوک ترسیلات پر پیش رفت رپورٹ پیش کی جائے گی۔ رپورٹ اسٹیٹ بنک، ایس ای سی پی، نیکٹا، ایف بی آر حکام نے مکمل کی۔

 

منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کے لئے مالی معاونت کی روک تھام سمیت کئی دیگر امور پر بات ہو گی۔ پاکستان منی لانڈرنگ کی روک تھام کے لئے اٹھائے گئے اقدامات پر بریفنگ دیگا۔ پاکستان منی لانڈرنگ سے دہشتگرد تنظیموں کے بارے اٹھائے گئے اقدامات پر بریف کریگا۔ ایف اے ٹی ایف کے حکام کے ساتھ پاکستان کو گرے لسٹ سے بھی نکالنے متعلق بھی بات ہو گی۔ پاکستان مئی 2019ء تک اپنے ایکشن پلان کی اہداف کو حاصل کردہ نکات پر بھی تبادلہ خیال کرے گا۔

 

دنیا بھر کی مارکیٹوں کے لوگ شفاف طریقہ کار کے تحت حاصل رقومات والی قوموں سے تجارت کےلئے اٹھائے گئے شفاف اقدامات پر بھی بریف کریگا۔ بھارتی لابی کی طرف سے پاکستان کو ایف اے ٹی ایف میں دبانے کی ناکام کوشش کے بعد پاکستان بھارت کو آڑے ہاتھوں لے گا۔ بھارت پلوامہ حملہ کو پاکستان سے منی لانڈرنگ اور دہشتگردی کی فنڈنگ سے جوڑنا چاہتا تھا۔

عطاء سبحانی  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں