ناراض ایم کیو ایم کو منانے میں پی ٹی آئی ناکام، خالد مقبول استعفے پر قائم

کراچی (پبلک نیوز) ناراض ایم کیو ایم کو منانے میں پی ٹی آئی آج ناکام رہی، خالد مقبول صدیقی استعفے پر قائم ہیں۔ اسد عمر کی سربراہی میں تحریک انصاف کا وفد ناراض اتحادی کو منانے گیا مگر بات نہ بنی۔ اسد عمر نے کہا خالد بھائی آپ کیوں ناراض ہوئے، ناراضی ختم کریں، بات چیت سے مسئلے حل ہو جائیں گے۔

 
 

ایم کیو ایم کو منانے کے لیے وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر تحریک انصاف کا وفد کراچی میں عارضی مرکز بہادر آباد پہنچا جس میں وفاقی وزیر اسد عمر، سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خرم شیر زمان اور فردوس شمیم نقوی شامل تھے۔

 

مذاکرات کے بعد پریس کانفرنس کے دوران خالد مقبول صدیقی نے وزارت سے دیا گیا استعفیٰ واپس نہ لینے کا اعلان کیا اور کہا کہ سو فیصد وزارت چھوڑنے کے فیصلے پر قائم ہوں۔ خالد مقبول صدیقی نے شکوہ کیا کہ ہمیں بات چیت نہیں، نتیجہ چاہئے، ملاقات تو پہلے بھی ہوئیں مگر کوئی نتیجہ نہیں نکلا۔ متحدہ رہنماوں کا کہنا تھا کہ ہم پر ووٹرز کا دباؤ ہے، انہیں جواب دینا مشکل ہو گیا ہے۔ شہر کی حالت بد سے بد تر ہوتی جارہی ہے، ہمارا اتحاد شہر کی بہتری کے لیے تھا۔

 

اس موقع پر اسد عمر نے کہا کہ ہماری خواہش ہے کہ خالد مقبول کابینہ کا حصہ رہیں لیکن وہ اب بھی اپنے فیصلے پر قائم ہیں۔ اسد عمر کا کہنا تھا کہ بڑے منصوبوں پر جلد کام شروع ہوجائے گا، اتفاق ہے کراچی کے لیے مل کر کام کریں گے، کراچی والوں کو حقوق نہیں ملے۔ اسد عمر نے یقین دہانی کرائی کہ آپ کے تمام تر تحفظات دور کریں گے، کراچی اور حیدر آباد میں جلد کام شروع کرائے جائیں۔

احمد علی کیف  6 روز پہلے

متعلقہ خبریں