ڈنمارک کی شہریت پانے کیلئے مسلم خواتین کا غیرمردوں سے ہاتھ ملانا لازمی قرار

کوپن ہیگن (پبلک نیوز) ڈنمارک میں مسلم مخالف متنازع قوانین میں اضافہ، نقاب پر پابندی کے بعد شہریت پانے کے لیے ہاتھ ملانا لازمی قرار دے دیا گیا، جو مسلم خواتین کے لیے معیوب عمل ہے۔

تفصیلات کے مطابق نقاب پر پابندی کے بعدنئی شہریت کے لیے ہاتھ ملانے کا متنازع قانون منظور کر لیا گیا۔ ڈنمارک کی شہریت حاصل کرنےوالوں کوتقریب میں حکام سےہاتھ ملانا لازمی ہوگا۔  ہاتھ نہ ملانے کی صورت میں شہریت نہیں دی جائےگی۔

خیال رہے کہ ڈنمارک میں چہرہ چھپانے پر پابندی کا قانون یکم اگست سے نافذ العمل ہے۔ اس پر نئی قانون سازی مسلمانوں کو نشانہ بنانے کا عمل سمجھا جا رہا ہے، کیونکہ مسلمان خواتین غیرمردوں سے ہاتھ ملانا معیوب سمجھتی ہیں۔

کئی میئرزکی جانب سے بھی حکومت کے منظور کردہ نئے قانون پر اعتراض کیا گیا ہے۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں