نقیب اللہ قتل کیس، مفرور ملزمان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری

کراچی(پبلک نیوز) کراچی انسداد دہشت گردی کی عدالت میں نقیب اللہ قتل کیس کی سماعت، عدالت نے مفرور ملزمان کے ایک بار پھر ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے سماعت 31اکتوبر تک ملتوی کر دی۔


انسداد دہشت گردی کی عدالت میں نقیب اللہ قتل کیس کی سماعت، سابق ایس ایس پی ملیر راو انوار سمیت دیگر ملزمان عدالت پیش۔ تفتیشی افسر نے مفرور ملزمان سے متعلق رپورٹ عدالت میں پیش کردی۔ راو انوار نے تفتیشی افسر کی رپورٹ کو جھوٹا قرار دے دیا۔ انہوں نے کہا کہ تفتیشی افسر نے جو رپورٹ ہائیکورٹ میں پیش کی وہ جھوٹ پر مبنی ہے۔ تفتیشی افسر غلط بیانی کر رہے ہیں، میں اپنی رہائش گاہ پر موجود ہوں۔

 

تفتیشی افسر کے جانب سے عدالت میں موقف پیش کیا گیا، مقتولین نقیب اللہ و دیگر کے خلاف درج مقدمات میں بی کلاس کی رپورٹ پر بھی فیصلہ سُنایا جائے۔ عدالت نے ریمارکس دئیے آئندہ سماعت پر بی کلاس مقدمات پر دلائل سنے جائیں گے، لیکن مقدمات منتقلی کی درخواست ہائی کورٹ میں زیر سماعت ہیں۔ جب تک ہائی کورٹ فیصلہ نہیں آجاتا عدالت بی کلاس پر فیصلہ نہیں دے سکتی۔ عدالت نے سماعت 31اگست تک ملتوی کر دی۔

 

واضح رہے 13 جنوری کراچی کے علاقے ملیر میں شاہ لطیف ٹاؤن میں سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار نے نوجوان نقیب اللہ محسود کو 3افراد کے ہمراہ دہشت گرد قرار دے کر مقابلے میں مار دیا تھا۔ رائو انوار کو نقیب اللہ قتل کیس میں گرفتار کیا گیا تھا۔

عطاء سبحانی  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں