پاکستان کی ڈوبتی معیشت میں نیب کا سب سے بڑا ہاتھ ہے: حمزہ شہباز

لاہور (پبلک نیوز) مسلم لیگ کے رہنماء اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز نے کہا ہے کہ وزیراعظم سرگودھا جا کر فوٹو سیشن کروارہا ہے۔ پاکستان کی معیشت آئی یم ایف کی باندی بن چکی ہے۔ موجودہ کابینہ کے وزراء بیرون ملک کی نیشنلٹی رکھتے ہیں۔

 

تفصیلات کے مطابق لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ چیرمین نیب آئینی ادارہ ہے پوری قوم حقائق جاننا چاہتی ہے۔ اعلی عدلیہ نے کہا کہ نیب سیاست زدہ ہے۔ ملک میں تماشہ لگا ہے اپوزیشن اس کی دہائی دس ماہ سے دے رہی ہے۔ اپوزیشن پر بے بنیاد کیس بنائے گے۔ پاکستان کی ڈوبتی معیشت میں نیب کا سب سے بڑا ہاتھ ہے۔ غریب آدمی کے لیے دو وقت کی روٹی مشکل ہے۔

 

حمزہ شہباز کا کہنا تھا کہ وزیراعظم سرگودھا جا کر فوٹو سیشن کروارہا ہے۔ پاکستان کی معیشت آئی یم ایف کی باندی بن چکی ہے۔ موجودہ کابینہ کے وزراء بیرون ملک کی نیشنلٹی رکھتے ہیں۔ بجٹ میں 700 ارب کے نئے ٹیکس لگیں گے۔ مہنگائی کا سونامی ابھی آئے گا۔ پشاور میں میٹرو بس میں 7 ارب کی کرپشن ہے۔

 

ان کا کہنا تھا کہ فیصل واڈا کی اپنی آف شور کمپنی ہے۔ خسرو بختیر کے خلاف نیب کے کیسز نظر نہیں آتے۔ احتساب کے حق میں ہے مشرف نے بھی 10 سال احتساب کیا احتساب سے ڈرنے والے نہیں۔ گرفتاریاں سے نہیں ڈرتے۔ وفاقی وزیر سچ نہیں بول رہے اپنی نوکریاں پکی کررہی ہیں۔ ٹیکنوکریٹ کی حکومت بن چکی ہے۔ مہنگائی سے ملک کے حالات مزید خراب ہو سکتے ہیں۔  کونسا احتساب ہے وزیر کرپشن میں ڈوبے کوئی پوچھنے والا نہیں اور اپوزیشن کے خلاف کارروائیاں کی جا رہی ہے۔

 

چیرمین نیب معلاملہ پر اپوزیشن پارلیمنٹ میں دیگر جماعتوں کو بھی اعتماد میں لے گی۔ پاکستان کے اندرونی مسائل بلوچستان میں دہشت گردی کے واقعات سر اٹھا رہے ہیں۔ اگر نیازی خان کو مزید ٹائم ملا تو یہ ملک کو برباد کردے گا۔ جھوٹے خان کو بھاگنے نہیں دیں گے اس کا احتساب کریں گے۔ ڈوبتی معیشت کو نکالنے کے لیے پالیسیاں نہیں صرف طوطا مینا کی کہانیاں ہیں۔ عید کے بعد مولانا فضل الرحمان اے پی سی بلائیں گے جس میں آئندہ کی حکمت عملی اپنائی جائے گی۔

حارث افضل  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں