نیازی صاحب احتساب تو وہ کرتا ہے جس کا دامن صاف ہو: حمزہ شہباز

لاہور(پبلک نیوز) اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز کا کہنا ہے کہ پنجاب اسمبلی ہنگامہ آرائی کی تحقیقاتی کمیٹی کو مسترد کردیا ہے۔ انکوائری کمیٹی میں 10ارکان حکومت اور دو اپوزیشن پارٹی کے ہیں۔ میں بطور اپوزیشن لیڈر اپنا کردار ادا کرتا رہوں گا۔


میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز کا کہنا تھا کہ نیازی صاحب نے قوم کے اربوں روپے ڈبو دیے، جو برتن خالی ہوتا ہے شور زیادہ کرتا ہے آپ اپنے کام پر توجہ دیں۔ نیازی صاحب خود بغض اور حسد میں گرفتار ہیں، اس لیے گرفتاری کی بات کرتے ہیں۔ عمران خان بھی ہیلی کاپٹر کیس میں پیشیاں بھگت چکے ہیں۔ احتساب کی بات کرنے والے نیازی صاحب احتساب تو وہ کرتا ہے جس کا دامن صاف ہو۔ میں کیا بابر اعوان، علیم خان یا پرویز الہی ہوں جوکہ آپ سے این آراو مانگوں گا۔

لیگی رہنماء حمزہ شہباز کا کہنا تھا کہ عدالت کا کہنا ہے کہ نیب کے افسران کے خلاف کارروائی ہونی چاہیے۔ آپ ہیلی کاپٹر میں سرکاری تیل ضائع کرنے کا جواب دیں۔ کل نیازی صاحب نے قوم سے دس منٹ کا خطاب کیا۔ اسپیکر ہمیشہ کمیٹی بنا کر انکوائری کراتے ہیں اور پھر رولنگ دیتے ہیں۔ ہمارا موقف تھاکہ اسمبلی کی تصویر بعد میں بنائی گئی۔ کیا وجہ ہے کہ اسپیکر صاحب شاہ سے زیادہ شاہ کے وفادار بننے کی کوشش کر رہے ہیں۔

 

حمزہ شہباز نے موجودہ حکومت کو تنقید کا نشانہ بنا ڈالاانہوں نے کہا کہ ہم نے پنجاب کے بجٹ کا 36 فیصد حصہ جنوبی پنجاب کے لیے رکھا جبکہ پنجاب میں 23 لاکھ افراد کو ہیلتھ کارڈز فراہم کیے۔ پشاور کی میٹرو بس 85 ارب روپے کی ہوچکی ہے اور ابھی تک کوئی کام نہیں ہوا۔ حکومت ہر معاملے میں ہماری نقل کرتے ہیں، نقل کیلئے بھی عقل کی ضرورت ہوتی ہے۔عدالت نے بھی کہا کہ دعوے تو بہت زیادہ کرتے ہیں، کے پی کے ہسپتالوں کی حالت دیکھیں۔

 

انہوں نے مزید کہا کہ جب آپ مشرف کے گن گاتے تھے تو میں نیب کی پیشیاں بھگت رہا تھا۔ ایک کروڑ نوکریوں کے وعدے کا بھی آپ سے جواب مانگیں گے۔ ہم حکومتی اقدامات اور یوٹرن کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے۔ ہم اپنا کردار ادا کرتے رہیں گے اور آپ کا یوٹرن بے نقاب کرتے رہیں گے۔ آج قوم پوچھتی ہے کہ شہباز شریف کو کیوں گرفتار کیا گیا ہے؟ شہباز شریف نے کئی منصوبوں میں اربوں روپے بچائے۔ اسد عمر صاحب ان کو کان میں بتا دیا کریں 60 دن میں کوئی کرپشن میں کمی نہیں ہوتی۔

عطاء سبحانی  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں