اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کی چیئرمین شپ چھوڑ دی

اسلام آباد(پبلک نیوز) اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کا کہنا ہے کہ ملکی تاریخ میں ایسا عوام دشمن بجٹ نہیں آیا۔ عمران خان سائیڈ لائن وزیراعظم ہیں، ان ہاؤس تبدیلی نہیں، نئے انتخابات، معیشت کو لگی بیماری کا علاج ہیں۔ ن لیگ کا پارلیمانی لیڈر تبدیل کرنے کا اعلان۔

 

مسلم لیگ ن کے صدر اور اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے پبلک اکاؤںٹس کمیٹی کی چیئرمین شپ چھوڑ دی، رانا تنویر حسین کو چیئرمین بنانے کا فیصلہ، ن لیگ کا پارلیمانی لیڈر بھی تبدیل کرنے کا اعلان، پارلیمنٹ ہاؤس میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف سے صحافیوں کی ملاقات، شہباز شریف نے حکومت پر خوب تنقید کی، پی اے سی چیئرمین شپ چھوڑنے اور نئے چیئرمین کے نام کا اعلان بھی کر دیا۔ بولے رانا تنویر چیئرمین پی اے سی ہوں گے، پیپلزپارٹی نے بھی ان کے نام پر اتفاق کر لیا ہے۔ اسپیکر کو بھی آگاہ کر دیاگیا، پارٹی کی سوچ کو وقت کے مطابق ڈھالاجاتا ہے۔

اپوزیشن لیڈر نے بجٹ پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ جو مطالبات اپوزیشن نے رکھے وہ حکومت نے نہیں مانے، بجٹ کا اصل رنگ جب سامنے آئے گا تب سمجھ آئے گی کیا ہوا۔ شہبازشریف کا کہنا تھا کہ ایک لفظ عمران خان کو نشتر کی طرح چبھا ہے، سلیکٹڈ نہ گالی ہے نہ گرا ہوا لفظ، یہ ڈکشنری کا لفظ ہے، اب اس کی جگہ کیا استعمال کیا جائے، عمران خان کی ٹیم ناکام ہو چکی۔ ماضی میں سب نے غلطیاں کیں۔ اپوزیشن کا فیصلہ تھا، لاڈلے کو ایکسپوز ہونے دیا جائے، سب نے دیکھ لیا، معیشت کی تباہی ہوئی۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں