عمران خان اور نیب جتنا بھی ظلم کرلیں، ڈرنے والے نہیں، شہباز شریف

 

لاہور(پبلک نیوز) قومی اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے کہا ہے کہ عمران نیازی اور نیب کی ملی بھگت سے لیگی قیادت پر بھرپور وار کیا گیا۔ عمران نیازی نے 11 ماہ میں ملکی معیشت کا جنازہ نکال دیا۔ عمران نیازی اورنیب جتنا بھی ظلم کرلیں، ڈرنے والے نہیں۔ ن لیگ ترقی کی ضامن اور پی ٹی آئی تباہی کی ذمہ دارہے۔

 

لاہور میں پریس کانفرس کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈر شہبازشریف کا کہنا تھا کہ عمران نیازی اور نیب کی ملی بھگت سے لیگی قیادت پر بھرپور وار کیا گیا۔ شاہد خاقان عباسی کو سفر کرتے ہوئے گرفتار کیا گیا۔ شاہد خاقان عباسی نے وارنٹ نہ ہونے پر احتجاج کیا۔ شاہد خاقان نے کہا کہ کوئی پریشانی نہیں، قانون کی حکمرانی پر یقین ہے۔ شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ وارنٹ دکھائیں اور گرفتار کرلیں۔

 

شہبازشریف کا کہنا تھا کہ گیس لوڈشیڈنگ ختم کرنے میں شاہد خاقان کا کلیدی کردارہے۔ وارنٹ مانگنے پر ایک فوٹو کاپی دکھائی گئی۔ رانا ثناء اللہ کو بھی بھونڈے انداز سے گرفتار کیا گیا۔ یہ مسلم لیگ ن کے خلاف بدترین انتقام ہے۔ عمران نیازی معاشی خسارے کو گرفتاریوں کے پیچھے چھپانا چاہتے ہیں۔

اپوزیشن لیڈر کا کہنا تھا کہ عمران نیازی نے 11 ماہ میں ملکی معیشت کا جنازہ نکال دیا۔ روپے کی قدر میں 40 روپے کمی کے باوجود برآمدات نہیں برھائی گئیں۔ بجلی کے 5 ہزارمیگاواٹ کے منصوبوں کو کھڈے لائن لگا دیا گیا۔ حکومت نےعوام پرٹیکس کا کلہاڑا چلا دیا۔

 

ان کا کہنا تھا کہ عمران خان چاہتے ہیں نہ کھیلیں گے اور نہ کھیلنے دیں گے۔ عمران نیازی اورنیب جتنا بھی ظلم کرلیں، ڈرنے والے نہیں۔ عمران نیازی صاحب یہ سودا آپ کو بہت مہنگا پڑے گا۔ نوازشریف سے مل کر آیا ہوں۔ ان کے حوصلے بلند ہیں۔ برطانیہ میں پاکستان کو بدنام کرنے کی ضرورت کیا تھی۔

 

شہبازشریف کا کہنا تھا کہ عمران خان نے 11 ماہ میں معیشت کا جنازہ نکال دیا۔ میں برطانیہ کی عدالت میں جارہا ہوں۔ برطانوی اخبار میں جھوٹی خبر شائع کرائی گئی۔ عمران نیازی یہ گردن کٹ سکتی ہے تمہارے آگے جھکے گی نہیں۔ ن لیگ ترقی کی ضامن اور پی ٹی آئی تباہی کی ذمہ دارہے۔ تحریک انصاف آئی ہے تباہی ساتھ لائی ہے۔

 

انھوں نے مزید کہا کہ عمران خان آپ کو مہنگائی کرنے پر این آراو نہیں دیں گے۔ امید ہے نوازشریف بے گناہ ثابت ہو کر بری ہوں گے۔ جج کی ویڈیو کا عدالت عظمیٰ نے نوٹس لے لیا ہے۔ ہارس ٹریڈنگ کا سوال مجھ سے نہیں عمران نیازی سے کیا جائے۔

احمد علی کیف  4 ماه پہلے

متعلقہ خبریں