بڑےایوان میں بڑی تبدیلی کا مشن، حاصل بزنجونئےچیئرمین سینیٹ نامزد

 

اسلام آباد(پبلک نیوز) نیشنل پارٹی کے حاصل بزنجو نئے چیئرمین سینیٹ نامزد، نواز شریف کا بھی میر حاصل بزنجو کو چیئرمین سینیٹ بنانے کے فیصلے پر اعتماد، حکومت کے پاس نمبر پورے نہیں وہ کامیاب نہیں ہوں گے۔

 

آج ہونے والے اپوزیشن کی رہبر کمیٹی کے اجلاس کے بعد اسلام آباد میں  پریس کانفرنس کے دوران کمیٹی کے کنوینر اکرم خان درانی کی جانب سے  حاصل بزنجو کو چیئرمین سینیٹ کے لیے متفقہ امیدوار نامزد کرنے کا اعلان کیا گیا۔ اپوزیشن کی اعلی قیادت کی جانب سے چیئرمین سینیٹ کی تبدیلی پر مشاورت مکمل کرلی گئی۔

 

میرحاصل بزنجو بلوچستان سے تعلق رکھنے کی بنیاد پر مضبوط امیدواربن گئے۔ تاہم اپوزیشن جماعتوں کی اعلی قیادت نے راجہ ظفرالحق پربھی اعتماد کا اظہار کیا۔ ذرائع کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف نے بھی میر حاصل بزنجو کو چیئرمین سینیٹ بنانے کے فیصلے پر اعتماد کا اظہار کیا.

 

میڈیا سے بات کرتے ہوئے جے یو آئی (ف) کے رہنما اکرم درانی کا کہنا تھا کہ اپوزیشن نے میر حاصل بزنجو کو چیئرمین سینیٹ کا امیدوار نامزد کیا ہے۔ تمام جماعتیں میر حاصل بزنجو کو ہی اپنے امیدوار کے طور جتوانے  کی کوشش کریں گی۔

 

مسلم لیگ (ن) کے احسن اقبال کا کہنا تھا کہ حکمران سینیٹ اجلاس بلانے سے ڈر رہے ہیں۔ تاہم کسی کو جمہوریت اور آئین کے ساتھ کھیلنے کی اجازت نہیں دیں گے۔ حکومت  نمبر پورے نہ ہونے کی وجہ سے کامیاب نہیں ہو پائے گی، مسلم لیگ متحد ہو کر چیئرمین سینیٹ کے لے ووٹ دے گی۔

 

پاکستان پیپلزپارٹی کے نیر بخاری کا حاصل بزنجو کے لئے نیک تمنائوں کا اظہار کرتے ہوئے کہنا تھا  کہ بلوچستان سے تعلق رکھنے والے حاصل بزنجو کا چیئرمین سینیٹ نامزد ہونے کا فیصلہ خوش آئند ہے۔ حاصل بزنجو کی جمہوریت کے لئے بے پناہ قربانیاں ہیں۔ امید ہے کہ  حاصل بزنجو چیئرمین سینیٹ منتخب ہوکر آئین کی بالادستی کے لئے اپنا بھرپور کردار ادا کریں گے۔

 

واضح رہے کہ اپوزیشن نے چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کی تبدیلی کے تحریکِ عدم اعتماد سینیٹ سیکریٹریٹ میں جمع کرادی ہے جس پر اپوزیشن کے 44 ارکان کے دستخط ہیں۔ اپوزیشن کی جانب سے چیئرمین سینیٹ کے لیے امیدوار حاصل بزنجو نیشنل پارٹی کے صدر ہیں جب کہ ان کی جماعت  سینیٹ میں 5 نشستیں رکھتی ہے۔

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں