اگر حکومت خود گرنا چاہ رہی ہے تو ہم کچھ نہیں کر سکتے: اپوزیشن ارکان

اسلام آباد (پبلک نیوز) اپوزیشن رہنماؤں نے کہا ہے کہ اگر حکومت خود گرنا چاہ رہی ہے تو ہم کچھ نہیں کر سکتے۔ جہاں آئے روز پالیسی بدلے تو سرمایہ کاربھاگ جاتا ہے۔ سارا قرضہ ملک کے خسارے کو ختم کرنے میں لگ جائے گا۔

وفاقی حکومت کی جانب سے 6 ماہ میں دوسرا منی بجٹ پیش کیا گیا جس میں متعدد ٹیکس آدھے جبکہ کچھ ٹیکس بالکل ختم کر دیئے گئے۔ منی بجٹ کے بعد اپوزیشن رہنماؤں کی جانب سے پریس کانفرنس کی گئی جس میں حکومتی بجٹ پر تنقید کی گئی۔

نوید قمر کا کہنا تھا کہ دوست ممالک سے آخر کتنا کر قرضہ لیں گے۔ اہم نکات پر کوئی بھی تشریح نہیں ہوئی۔ حکومت کو قرضے شارٹ ٹرم کے لیے ملے ہیں۔ اپوزیشن ملک میں جمہوری استحکام چاہتی ہے۔ اگر حکومت خودگرنا چاہ رہی ہے تو ہم کچھ نہیں کرسکتے۔

احسن اقبال نے کہا کہ جہاں آئے روز پالیسی بدلے تو سرمایہ کاربھاگ جاتا ہے۔ حکومت کی پالیسیوں سے ملک کے اندر سرمایہ باہر بھاگ گیا ہے۔ حکومت 12ارب ڈالر کا قرضہ لے چکی ہے۔ سارا قرضہ ملک کے خسارے کو ختم کرنے میں لگ جائے گا۔

احمد علی کیف  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں