پاکستان ہر وقت کشمیر کیلئے جنگ پر تیار رہتا ہے: ترجمان پاک فوج

راولپنڈی(پبلک نیوز) ترجمان پاک فوج میجر جنرل آصف غفور کا کہنا ہے کہ بھارت جو رویہ پاکستان میں دیکھنا چاہتاہے وہ نہیں آئے گا۔ پاکستان نے سرحدی خلاف ورزی کا بھی جواب دیا۔ پائلٹس والے معاملے پر پوزیشن دوسرے ٹویٹ میں واضح کی۔ یہ 1971نہیں اور نہ ہی وہ فوج ہے۔


پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ ( آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غفور نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پریس کانفرنس کا مقصد ملکی مجموعی صورتحال سے آگاہ کر نا ہے۔ پاکستان نے بھارت کی لفظی اشتعال انگیزی کا جواب بھی نہیں دیا۔ بھارتی ایئراسٹرائیکس سے کوئی جانی و مالی نقصان نہیں ہوا، بھارت کے 2 جہاز وں کا ملبہ پوری دنیا نے زمین پر دیکھا۔ بھارت کو واضح کہا پاکستان کا پلواما واقعہ سے تعلق نہیں۔2 ماہ میں بھارت نے ان گنت جھوٹ بولے۔

 

ترجمان پاک فوج نے کہا کہ بھارت کے جھوٹو ں کا جواب بھی نہیں دیا۔ عالمی میڈیا سے کہا بھارت ایک بار ثبوت دے دے مان لیں گے۔ پاکستان نے سرحدی خلاف ورزی کا بھی جواب دیا، 2 پائلٹس والے معاملے پر پوزیشن دوسرے ٹوئٹ میں واضح کی، کیا آپ پہلے ٹوئٹ کو مانتے ہیں دوسرے کو نہیں؟ بھارت کہتا ہے! پاکستان کا رویہ تبدیل کرنا ہے، بھارت ہمارا رویہ تبدیلی نہ کر سکا بھارت میں کچھ کچھ تبدیلی آرہی ہے، بھارت جو رویہ پاکستان میں دیکھنا چاہتا ہے وہ نہیں آئے گا، بھارت نے اپنا ایم 17 ہیلی پاک فضائیہ کے ڈر سے گرایا،جو گرجتے ہیں وہ برستے نہیں۔

 

ترجمان پاک فوج میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ بھارت نے بعد میں ایم 17 کا بلیک باکس بھی غائب کر دیا، بھارت ہمارے عزم کا امتحان نہ لے، بھارت کچھ کرنا چاہتا ہے تو اپنے جہازوں کے گرنے کا حساب رکھے، یہ 1971نہیں اور نہ ہی وہ فوج ہے، کوئی بھی جارحیت ہوئی تو 27 فروری ولا جواب دوبارہ مل سکتا ہے۔ کشمیر ہماری رگوں میں دوڑتا ہے۔ پاکستانی ہر وقت کشمیر کے لیے جنگ پر تیار رہتا ہے۔ بائن الیون سے آج تک پاکستان کی دہشت گردی کے خلاف کارروائیاں جاری ہیں، دہشت گرد تنظیموں کے خلاف پاک فوج نے کارروائیاں کیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں 81 ہزار سے پاکستانی شہید ہوئے،3 بار پاک فوج کو سرحدوں کی جانب جانا پڑا، پاکستان میں 30 ہزار مدارس ہیں، جامعہ نعیمیہ کے طالب علم نے میرٹ پر فوج میں کمیشن حاصل کیا، فیصلہ کیا ہے مدارس کو مین اسٹریم میں لایا جائے گا، تمام مدرسوں کو وزارت تعلیم کے ماتحت کیا جائے گا، علما مدارس کو مین اسٹریم میں لانے پر متفق ہیں، مدارس میں امریکا سمیت دیگر ممالک سے بھی طلبا آتے ہیں۔ ہمارے نوجوانوں نے دہشتگردی کا مقابلہ کیا۔ دہشت گردی کو ترویج دینے والے 100 سے بھی کم مدارس تھے۔

 

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ اس وقت پاکستان میں کوئی بھی دہشت گرد انفراسٹرکچر نہیں،70 ممالک کے ساتھ انٹیلی جنس شیئرنگ ہوتی ہے، اس جنگ میں پاکستانی معیشت کو 300ارب ڈالر کا نقصان ہو چکا ہے، آرمی چیف کہتے ہیں اپنا فقہ چھوڑو نہیں، دوسرے کو چھیڑو نہیں، سی پیک صرف نارتھ ساؤتھ لنک نہیں، سی پیک میں ایسٹ ویسٹ لنک بھی ضروری ہے، ایسٹ ویسٹ لنک کے لیے ضروری ہے اپنے تنازعات حل کیے جائیں، پی ٹی ایم جب شروع ہوئی تو سب سے پہلے میرا ساتھ رابطہ ہوا۔

 

ترجمان پاک فوج میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ آصف غفور آرمی چیف نے مجھے کہا کہ آپ پی ٹی ایم سے بات چیت کریں، تحریک لبیک کے خلاف ایکشن لیا تو لوگوں نے کہا پی ٹی ایم کے خلاف کیوں نہیں، 48 ٹیموں نے 45 فیصد علاقے کو بارودی سرنگوں سے صاف کر دیا، بارودی سرنگوں کو ہٹانے میں 101 فوجی شہید ہوئے، محسن داوڑ سے بھی میری ملاقات ہوئی، جب گلے کاٹے جا رہے تھے تب کہاں تھی پی ٹی ایم؟

 

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ پی ٹی ایم بتائے ویب سائٹ پر ڈیکلیئر سے کہیں سے زیادہ پیسہ کہاں سے آیا، پی ٹی ایم بتائے اسلام آباد دھرنے کے لیے"را" نے کتنے پیسے دیئے، پی ٹی ایم دبئی سے حوالہ ہنڈی کے ذریعے آنے والے پیسے کا حساب دے۔ منظور پشتین کا کون سا رشتہ دار تھاجو قندھار میں بھارتی قونصل خانے گیا، کون سا قانون کہتا ہے زبر دستی سرحد پار جا کر لوگوں کو اشتعال دلائیں، بتائیں افغانستان میں فوج کی حمایت میں بولنے والا کیوں مارا جاتا ہے۔


ترجمان پاک فوج نے مزید کہا کہ پی ٹی ایم نے ایس پی طاہر داوڑ کی میت حوالگی سے کیوں روکا، ٹی ٹی پی، پی ٹی ایم کے حق میں کیوں بولتی ہے۔ پی ٹی ایم بیرون ملک پاکستان مخالف لوگوں سے کیوں ملتی ہے۔ پی ٹی ایم بتائے پاکستان کا حصہ ہے یا افغانستان کا۔ پی ٹی ایم کا وقت ختم ہو گیا جتنی آزادی لینی تھی لے لی۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں