پاکستان، سعودی عرب کی سپریم کوآرڈینیشن کونسل کا اجلاس آج ہو گا

اسلام آباد(پبلک نیوز) ولی عہد کی آمد پر پاکستان اور سعودی عرب کی سپریم کوآرڈینیشن کونسل کا اجلاس آج ہوگا۔ اجلاس میں کونسل دونوں ممالک کے درمیان سیاسی اور معاشی ترقی کے اہداف طے کرے گی۔

 

ذرائع کے مطابق سعودی ولی عہد محمد بن سلمان اور وزیراعظم عمران خان سپریم کوآرڈینیشن کونسل کے اجلاس کی مشترکہ صدارت کریں گے۔ کونسل دونوں ممالک کے درمیان سیاسی اور معاشی ترقی کے اہداف طے کرے گی۔ دونوں ممالک کے درمیان سفارتی دفاعی اور ثقافتی شعبوں میں تعاون کے لئے تین پلرز قائم۔

 

پاک سعودی رابطوں کے بعد تینوں پلرز کی اسٹیرنگ کمیٹیاں تشکیل دے دی گئی۔ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان پہلا پلر "پولیٹیکل اینڈر سکیورٹی" ہو گا۔ سعودی عرب کی جانب سے خارجہ، دفاع اور داخلہ کی وزارتیں سیکیورٹی پلر میں شامل ہوں گی، سعودی ہوم لینڈ سیکیورٹی اور جنرل انٹیلی جنس کے حکام بھی شامل ہوں گے۔

 

پاکستان کی جانب سے خارجہ دفاع اور داخلہ کے وزراء نمائندگی کریں گے۔ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان دوسرا پلر معیشت کا ہو گا۔ دونوں ممالک سرمایہ کاری اور تجارت اور دفاعی پیداوار بڑھانے پر کام کریں گے۔ توانائی، انڈسٹری، سیاحت اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کے فروغ کو ترجیح دیا جائے گا۔

 

سعودی عرب کی جانب سے 9 وزارتیں اقتصادی پلر میں شامل ہوں گی۔ خزانہ، منصوبہ بندی، سرمایہ کاری، توانائی اور انڈسٹری کے وزراء شامل ہوں گے۔ معدنیات، کمیونکیشن، ٹراسپورٹ اور کامرس کے وزیر بھی حصہ ہوں گے۔ سعودی فنڈ فار ڈویلپمنٹ اور پبلک انویسٹمنٹ فنڈ بھی پلر میں شامل ہوں گے۔

 

پاکستان کی جانب سے 11 وفاقی وزارء پر مشتمل اقتصادی پلر تشکیل دے دیا گیا۔ خزانہ، منصوبہ بندی، کامرس، پٹرولیم، توانائی، بحری اموراور مواصلات کے وزراء شامل ہوں گے۔ بورڈ آف انویسٹمنٹ، آئی ٹی بحری امور،اور آئی پی سی کی وزارتیں بھی حصہ ہیں۔

 

پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان تیسرا پلر سماجی اور ثقافتی ترقی کا ہو گا۔ سعودی عرب کی جانب سے ثقافت، تعلیم اور مذہبی امور کے وزراء شریک ہوں گے۔ حج و عمرہ سمیت لیبر کے وزراء بھی ثقافتی پلر میں شامل ہوں گے۔ پاکستان کی جانب اطلاعات، تعلیم، مذہبی امور اور اورسیز پاکستانیوں کے وزراء شامل ہوں گے۔

عطاء سبحانی  7 ماه پہلے

متعلقہ خبریں